۔3برسوں میں پُرتشدد واقعات میں خاطر خواہ کمی: ریڈی

 نئی دہلی // مرکزی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ پچھلے 3برسوں میں جموں کشمیر میں شدت پسندانہ واقعات میں خاطر خواہ کمی واقع ہوئی لیکن سرحد پار سے گولہ باری کے واقعات میں اچانک اضافہ ہوا۔مرکزی وزارت داخلہ میں وزیر مملکت جی کشن ریڈی نے راجیہ سبھا میں بدھ کے روز کہا ’’ پچھلے 3برسوں میں  جموں کشمیر میں تشدد آمیز واقعات میں خاطر خواہ تک کمی واقع ہوئی لیکن شلنگ کے واقعات میں اچانک اور غیر متوقع طور پر اضافہ ہوا‘‘۔ریڈی نے کہا کہ جموں کشمیر میں 2018میں614 تشدد آمیز واقعات رونما ہوئے جو کم ہو کر 2020میں 244رہ گئے۔انکا کہنا تھا کہ 2018میں 39شہری مارے گئے اور 2020میں یہ تعداد 37رہی۔سیکورٹی فورسز کی ہلاکتیں 2018میں 91تھی جو 2020میں 62تھی۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی کی جانب سے 2018میں شلنگ کے 2140واقعات پیش آئے جو 2020میں 5133تک پہنچ گئے۔