۔3اور 4مارچ کو بھاری برف و باراں متوقع ۔ 26اور 27فروری کو بھی خراب موسم کی پیش گوئی

 یو این آئی

سرینگر//محکمہ موسمیات نے وادی کشمیر میں مارچ کے پہلے ہفتے کے دوران وسیع پیمانے کے برف و باراں کے ایک اور مرحلے کی پیش گوئی کی ہے۔محکمہ موسمیات سرینگر ڈائریکٹر ڈاکٹر مختار احمد نے کہا کہ وادی میں 26 فروری تک موسم خشک رہنے کا امکان ہے، بعد ازاں ایک کمزور مغربی ہوا کا دبائو داخل ہونے کے نتیجے میں وادی میں 26 فروری کی شام سے 28 فروری کی صبح تک ہلکی سے درمیانی درجے کی بارشوں اور برف باری کا امکان ہے۔ان کا کہنا ہے کہ پھر 29 فروری کو بھی موسم ابر آلود ہی رہے گا۔موصوف نے کہا کہ اس کے بعد شدید نوعیت کی ایک اور مغربی ہوا کی لہر داخل ہونے کے نتیجے میں وادی میں یکم مارچ سے 3 یا 4 مارچ تک میدانی علاقوں میں ہلکی برف باری اور بارشیں جبکہ پہاڑی علاقوں میں کہیں بھاری برف باری ہوسکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ میدانی علاقوں میں زیادہ بارشوں کے ہی امکانات ہیں تاہم ہلکی برف باری کو بھی خارج از امکان قرار نہیں دیا جا سکتا ۔ان کا کہنا تھا کہ پہاڑی علاقوں کے لوگوں کو ان جگہوں پر جانے سے گریز کرنا چاہئے جہاں برفانی تودے گر آنے کے خطرات رہتے ہیں۔ادھرکشمیر میں رات کا درجہ حرارت کم ہوگیا ہے۔ گلمرگ میں منفی 10.0 ڈگری جبکہ پہلگام میں منفی 9.5 درج کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ جموں میں 6ڈگری درج کیا گیا جبکہ بانہال میں منفی 1.6 ، بٹوٹ میں 0.2 اور بھدرواہ میں منفی 2.4 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔