۔213کروڑ روپے مالیت کا ر پارکنگ، 1300کارں اور200ٹو ویلررکھنے کی گنجائش

جموں//وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے سرمائی دارلخلافہ جموں شہر کا دورہ کیا اور وہاں کئی جاری ترقیاتی پروجیکٹوں کے کام کا جائیزہ لیا ۔ نائب وزیر اعلیٰ کویندر گپتا وزیر اعلیٰ کے ہمراہ تھے ۔ وزیر اعلیٰ نے جنرل بس سٹینڈ کا دورہ کیا اور وہاں جدید کاری کے پروجیکٹ اور کثیر سطحی پارکنگ کو ترقی دینے کے پروجیکٹ کا جائیزہ لیا ۔ محبوبہ مفتی کو اس موقعہ پر بتایا گیا کہ 213 کروڑ روپے کئے پروجیکٹ پر کام جاری ہے جو اگلے سال کے اوائیل میں مکمل کیا جائے گا ۔ انہیں بتایا گیا کہ کثیر السطحی پارکنگ سہولیت پر بھی کام جاری ہے جس میں 1300 کاریں اور 200 ٹو وہیلر رکھنے کی گنجائش ہو گی اس کے علاوہ اس عمارت میں ریسٹورنٹ اور دفتروں کیلئے بھی جگہ موجود ہو گی ۔ اس عمارت میں سُپر سپیشلٹی ہسپتال جموں کے ساتھ جُڑنے والا ایک کاریڈور بھی موجود ہو گا جس کی بدولت مسافروں کو سہولیت ہو گی ۔ اس کے علاوہ نوا باد کے ساتھ جُڑنے والا ایک لنک بھی موجود تھا ۔ مکانات و شہری ترقی کے وزیر ست شرما ، مکانات و شہری ترقی محکمے کے فائنانشل کمشنر کے بی اگروال و دیگر افسران اس موقعہ پر موجود تھے ۔ وزیر اعلیٰ نے تعمیر کئے جا رہے جموں چڑھیا گھر پروجیکٹ کا بھی معائینہ کیا جو 121 کروڑ روپیء کی لاگت سے تعمیر کیا جا رہا ہے ۔ انہیں بتایاگیا کہ اس پروجیکٹ کی تعمیر کے ساتھ یہ چڑھیا گھر ناردرن انڈیا کا سب سے بڑا چڑھیا گھر ہو گا ۔ اس چڑھیا گھر کے اندر 12 کلو میٹر لمبا گرین ٹریک بھی ہو گا ۔ یہ چڑھیا گھر 2020 تک مکمل ہو گا لیکن اس کا ایک حصہ اس سال اکتوبر میں عوام کیلئے کھول دیا جائے گا ۔ ایم ایل اے نگروٹہ دویندر رانا ، کمشنر سیکرٹری فارسٹ سوربھ بھگت و دیگر افسران اس موقعہ پر موجود تھے ۔ محبوبہ مفتی نے جگٹی میں انڈین انسٹی چیوٹ آف ٹیکنالوجی کا دورہ کیا اور وہاں کی انتظامیہ اور فیکلٹی سے بات چیت کی ۔ وزیر اعلیٰ کو بتایا گیا کہ اس پروجیکٹ کا پہلا مرحلہ اس سال جولائی میں مکمل ہو گا اور اس کے ساتھ ہی طلاب کے تیسرے بیچ کا داخلہ شروع کیا جائے گا ۔ وزیر اعلیٰ کو بتایا گیا کہ دس سال کے اندر آئی آئی ٹی میں 12 ہزار طلاب تعلیم حاصل کریں گے اور انہیں ٹنل ٹیکنالوجی ، ہمالین ٹیکنالوجی اور جیو ٹیک جیسے مضامین پڑھائے جائیں گے ۔ انہیں بتایا گیا کہ کیمپس کی آٹھ کلو میٹر طویل دیوار بندی مکمل کی گئی ہے اور تمام انڈر گریجویٹ لیبارٹریاں اس سال جولائی تک تیار ہوں گی ۔ اعلیٰ تعلیم کے وزیر عمران رضا انصاری ، ایم ایل اے دویندر رانا و اعلیٰ افسران اس موقعہ پر موجود تھے۔ وزیر اعلیٰ نے جگٹی میں ٹرائیبل بھون کا سنگِ بنیاد رکھا جس پر 73 کروڑ روپے لاگت آنے کا اندازہ ہے اس بھون کے چھ بلاک اور ایک آڈیٹوریم جس میں 400 لوگوں کے بیٹھنے کی گنجائش ہو گی ۔ بھون میں ایک ایم فی تھیٹر بھی ہو گا اور یہ پروجیکٹ دو سال کے اندر مکمل ہونے کی اپیل ہے ۔ قبائلی امور کے وزیر چودھری ذوالفقار ، ایم ایل اے دویندر رانا ، وائس چئیر مین جی بی بورڈ چودھری گلزار کھٹانا ، معروف گُجر لیڈر چودھری عبدالحمید کے علاوہ کئی معزز شخصیات اس موقعہ پر موجود تھیں ۔ محبوبہ مفتی نے جموں شہر کے مہامایا میں تعمیر کئے جا رہے روپ وے پروجیکٹ کا معائینہ کیا ۔ انہیں بتایا گیا کہ اس سال جولائی تک کیبل کارت کا پہلا مرحلہ مکمل کیا جائے گا ۔ وزیر اعلیٰ نے بھور فلورل کیمپ کا دورہ کیا اور وہاں اپ گریڈیشن پروجیکٹ پر جاری کام کا معائینہ کیا ۔ محبوبہ مفتی کو بتایا گیا کہ دوسرے مرحلے میں 180 کنال اراضی پر دس کروڑ روپے کا فلوری کلچر سنٹر قایم کیا جائے گا ۔ پھول بانی ، باغات و پارکوں کے وزیر جاوید احمد میر اس موقعہ پر موجود تھے ۔ وزیر اعلیٰ نے بعد میں جموں ائیر پورٹ کو وسعت دینے کی سائیٹ کا جائیزہ لیا ۔ انہیں بتایا گیا کہ فوج سے 17 ایکڑ اراضی کو منتقل لکرنے کے کاغذات مکمل کئے گئے ہیں اور اس پروجیکٹ پر کام اسی مہینے شروع ہو گا ۔ انہیں بتایا گیا کہ وسعت دینے والے پروجیکٹ کا کام 20 ماہ میں مکمل ہو گا ۔ ڈویژنل کمشنر جموں ہیمنت شرما ، آئی جی پی جموں زون ڈاکٹر ایس ڈی ایس جموال ، صوبائی و ضلع انتظامیہ کے افسران اس موقعہ پر موجود تھے ۔