۔2017میں386فورسز اہلکارہلاک :لشکر طیبہ

سرینگر//لشکر طیبہ نے دعویٰ کیا ہے کہ گزشتہ سال386فوجی اہلکاروں کو ہلاک کیا گیا۔ لشکر ترجمان ڈاکٹر عبداللہ غزنوی نے سالانہ آپریشن رپورٹ پیش کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ گزشتہ برس یکم جنوری سے دسمبر 2017 تک فورسز، فوج اور عسکریت پسندوں کے درمیان جموں کشمیر میں معرکہ آرائیوں اور جھڑپوں میں386اہلکاروں کو ہلاک کیا گیا۔لشکر ترجمان کے مطابق’’ اعداد وشمار اس بات کی عکاسی کرتے ہیں کہ عسکریت پسندوں کو کس سطح کی کامیابی حاصل ہوئی‘‘۔ انہوں نے کہا کہ بیشتر حملے اکھنور، بانڈی پورہ، کپوارہ، پونچھ، راجوری اور وادی کے دیگر علاقوں میں کئے گئے۔ ڈاکٹر غزنوی کے مطابق’’ ان حملوں میں442اہلکار زخمی ہوئے جبکہ120عسکریت پسند بھی جان بحق ہوئے‘‘۔لشکر ترجمان نے سال بھر ہوئے حملوں پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ2018میں بھی حملوں کا سلسلہ جاری رہے گا۔