۔2014کے سیلاب میں تباہ ہوئے چھترال پل کی مرمت نہ ہوسکی

مینڈھر//مینڈھر کے چھرال علا قہ میں 2014کے سیلاب کے دورا ن تباہ ہوئے پل کی مرمت نہ ہونے کی وجہ سے مقامی لوگوں کےساتھ ساتھ گور نمنٹ ہائر سکینڈری سکول چھترال کے طلباءکو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑر ہا ہے ۔مقامی لوگوں کے مطابق سیلاب کی وجہ سے تباہ شدہ پل کی مرمت کےلئے محکمہ تعمیر ات عامہ و ضلع انتظامیہ کی طرف سے کوئی بھی قدم نہیں اٹھا یا گیا جس کی وجہ سے اب سکولی بچوں کے علاوہ عام لوگوں کو بھی نالہ سے گزر نا پڑتا ہے ۔مقامی لوگوں ننے متعلقہ محکمہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ نالہ چھترال پر بنایا ہو ا پل سینکڑوں کی تعداد میں سکول بچوں کا واحد راستہ تھا جبکہ گرد و نواح کے لوگ بھی اسی راستے سے دریا پار کر تے تھے لیکن پل کے بہہ جانے کی وجہ سے گزشتہ پانچ برسوں سے لوگوں کو دریا پار کرنے میں کئی طرح کی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔لوگوں نے کہاکہ انہوں نے کئی مرتبہ انتظامیہ سے رجوع بھی کیا لیکن ان کی عدم توجہی کی وجہ سے ہر بار مایوس ہو کر واپس آئے ہیں ۔انہوں نے ضلع و ریاستی انتظامیہ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ چھترال دریا پر جلد از جلد پل کی مرمت کی جائے تاکہ سکولی بچوں کےساتھ ساتھ عام لوگوں کو درپیش مشکلات حل ہو سکیں ۔