۔18ماہ بعد مرکزی وزارت داخلہ کا فیصلہ

سرینگر//جموں و کشمیر حکومت نے سابق آئی اے ایس آفیسر بصیر احمد خان کو لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر کے عہدے سے فارغ کردیا ہے۔اس ضمن میں منگل کی شام احکامات صادر کئے گئے ۔ بصیر احمد خان کو18ماہ بعد مشیر کے عہدے سے ہٹا دیا گیا۔بصیر خان کو وزارت داخلہ کی جانب سے احکامات صادر ہونے کے بعد صلاح کار کی ذمہ داریوں سے فارغ کرنیکا فیصلہ کیا گیا۔ عمومی انتظامی محکمہ کی جانب سے جاری آرڈر میں کہا گیا ہے۔ ’’وزارت داخلہ کی جانب سے کمیونی کیشن نمبر 15030/40 /2019-J&K  بتاریخ 4 اکتوبر ، 2021 ، بصیر احمد خان (سبکدوش آئی اے ایس آفیسر 2000 ) کو مرکزی زیر انتظام جموں کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر کے عہدے سے فوری طور پر فارغ کیا جاتاہے‘‘۔ سابق صوبائی کمشنر کشمیربصیر احمد خان کو ریٹائر منٹ کے فوراً بعد مرکزی وزارت داخلہ کی طرف سے 16مارچ2020کو اس وقت کے لیفٹیننٹ گورنر جی سی مرمو کا چوتھامشیر نامزد کیا گیاتھا۔ خان کی ملازمت میں صوبائی کمشنر کے طور پر جون2019میں ایک سال کی توسیع کی گئی تھی،جبکہ سال2000کو انہیں آئی اے ایس میں شامل کیا گیا تھا۔