۔143 ایمبولنسوں نے عالمی وباء کے دوران 1794افراد کی جان بچائی

  سرینگر //جموں و کشمیر میں عالمی وباء کے دوران 24 مارچ 2020 کو شروع کی گئی مفت ایمبولنس سروسز 108میں ابتک ٹریفک حادثات میں زخمی ہونے والے 1794 افراد کو اسپتال پہنچاکر انکی جان بچائی گئی۔ ان میں 1065جموں جبکہ 726افراد کشمیر میں مختلف ٹریفک حادثات میں زخمی ہوئے تھے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اننت ناگ میں 98، بانڈی پورہ میں 56، بارہمولہ88، گاندربل47، کولگام60، پلوامہ61، شوپیان38،بڈگام70، سرینگر69، کپوارہ139، جبکہ جموں صوبے میں71ڈودہ، 191جموں، 160کٹھوعہ، 31کشتواڑ، 58پونچھ، 105راجوری، 60رام بن، 81ریاسی، 228سانبہ اور 135ادھمپور سے تعلق رکھتے تھے۔ جموں و کشمیر میں مفت ایمبولنس سروسز 108کے جنرل منیجر مشتاق احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’  ایک کروڑ 25لاکھ سے زائد آبادی پر مشتمل جموں و کشمیر اور لیہہ لداخ کیلئے 143ایمبولنس گاڑیاں فراہم کی گئی ہیں جن میں 75جموں،68کشمیر اور 4ایمبولنس گاڑیاں لیہہ لداخ میں موجود ہیں‘‘ مشتاق نے بتایا کہ عالمی وباء کے دوران ان ایمبولنس گاڑیوں کی وجہ سے مختلف اضلاع میں زخمی ہونے والے لوگوں کو اسپتال پہنچایا گیا ‘‘۔مشتاق نے بتایا’’ ایک سال کے عرصے کے دوران 1794افراد کو اسپتال پہنچاکر انکی جان بچائی گئی ‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ایمبولنس گاڑیوں میں موجود جدید طبی سہولیات کی وجہ سے زخمیوں کو بروقت طبی امداد بھی دی گئی۔ جنرل منیجر نے بتایا’’  ایمبولنس سروسز میں تربیت یافتہ عملہ کے علاوہ آکسیجن، جی بی ایس اور دیگر جدید ٹیکنالوجی نصب ہے‘‘۔ انہوں نے کہا ’’ان ایمبولنس گاڑیوں میں ایمرجنسی میڈیکل ٹیکنیشین بھی موجود رہتے ہیں جو ضرورت پڑنے پر مریضوں کو طبی امداد فراہم کرتے ہیں‘‘۔