۔12ویں جماعت کے سالانہ امتحانات کا آغاز

سرینگر// جموں کشمیر بورڈ آف اسکول ایجوکیشن کی جانب سے منگل کوکووڈ معیاری عملیاتی طریقہ کارپر عملدر آمد کے ساتھ12ویں جماعت کے امتحانات کا با ضابطہ طور پر آغاز ہوگیا ۔ منگل سے ہی شہر سرینگر اور وادی کے دیگر اضلاع میں بارہویں جماعت میں زیر تعلیم طلاب نے سرد موسم کے بیچ امتحانی مراکز کا رخ کیا ۔ انتظامیہ نے امتحانات کو خوش اسلوبی کے ساتھ انجام دینے اور کسی بھی امکانی گڑ بڑھ سے نمٹنے کیلئے امتحانی مراکز کے باہر دفعہ 144نافذ کر کے سخت ترین سیکورٹی کے انتظامات کئے تھے ۔ امتحانات  میں مجموعی طور پر 74000طلاب شریک ہوئے جس کے لئے پوری وادی میں740کے قریب امتحانی مراکز قائم کئے گئے تھے۔ بورڈ کی طرف سے جاری اعداد و شمار کے مطابق بارہویں جماعت کے پہلے پرچے میں امتحانات کیلئے 99فیصد طلباء و طالبات نے حصہ لیا ۔ امتحان میں کورنا وائرس کے پیش نظر نصاب میں 30فیصد کی رعایت تھی جس کا پہلے ہی اعلان کیا گیا تھا ۔ امتحانی عمل پر نظر گزر رکھنے کیلئے تمام ڈپٹی کمشنروں کے دفاتر میں کنٹرول روم ہمہ وقت متحرک رہا کریں گے تاکہ کسی بھی طرح کی صورتحال سے بر وقت نپٹا جاسکے ۔ کشمیر میں امتحانات بڑی خوش اسلوبی کے ساتھ منعقد ہوئے اور کسی جگہ سے کسی نا خوشگوار واقعہ کی کوئی اطلاع نہیں ہے ۔ بورڈ آف اسکول ایجوکیشن کی جانب سے جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق بارہویں کے امتحان میں کل ملا کر 74ہزار امید وار شامل ہو رہے ہیں۔امتحانی مراکز کی تعداد ا میں اس لئے اضافہ کیا گیا کیونکہ ماضی کے مقاملے میں ان مراکز میں نصف تعداد میں ہی طلاب کو ہال میں بیٹھنے کی اجازت ہوگی۔اس بات کا پہلے ہی اعلان کیا گیا ہے کہ امتحانات کورونا معیاری عملیاتی طریقہ کار کے عین مطابق منعقد کرائے جائیں گے،جبکہ امتحانی مراکز میں جسمانی فاصلے کو عملاتے ہوئے سینٹی ٹائزر اور دیگر صفائی ستھرائی کا انتظام، جہاں ہوگا وہی امتحانی مرکز میں داخل ہونے سے قبل امیدواروں کی تھرمل جانچ بھی ہوگی۔ حکام کا کہنا ہے کہ انہوں نے احسن طریقے سے امتحانات منعقد کرنے کیلئے تمام تر انتظامات کئے ہیں۔