۔11ویں جماعت کے امتحانات کابورڈ کے ذریعے انعقاد، طالب علموں کے وسیع ترمفاد میں: ناظم تعلیم کشمیر

سر ی نگر//ناظم تعلیم کشمیر ڈاکٹر جی این ایتو نے کہا ہے کہ گیارہویں جماعت کے امتحانات سٹیٹ بورڈ آف سکول ایجوکیشن کے ذریعے منعقد کرانے کا فیصلہ طالب علموں کے وسیع مفاد میں لیا گیا ہے تاکہ طالب علم بارہویں جماعت اور مسابقتی امتحانات کے لئے تیاریاں کرسکیں۔ناظم تعلیم نے کہا ہے کہ یہ فیصلہ اُن طالب علموں اور ان کے والدین کے مطالبے کو نظر میں رکھتے ہوئے لیا گیا ہے جو اس امتحان کو دسویں اور بارہویں جماعت امتحانات کے طرز پر منعقد کرانے کے متمنی تھے۔ناظم تعلیم نے کہا ہے کہ اس فیصلے کی جہاں عوام کی پذیرائی کی ہے انہوں نے کہاکہ امتحانات نظام تعلیم کا ایک لازمی حصہ ہے جو طالب علموں کی ذہانت معلوم کرنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔والدین طالب علموں اور متعلقین کے علاوہ پرائیویٹ تعلیمی اداروں کا اس سلسلے میں تعاون طلب کرتے ہوئے ناظم تعلیم نے کہا کہ محکمہ نے پہلے ہی اداروں کے سربراہوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ طالب علموں کی خصوصی کونسلنگ کریں تاکہ وہ امتحانات کے دبائو سے باہر آسکیں۔ناظم تعلیم نے مزید کہا کہ تعلیمی اداروں کے سربراہوں کو واضح ہدایت دی گئی کہ وہ امتحانات شروع ہونے سے قبل سیلبس مکمل کرنے کو یقینی بنائیں۔ناظم تعلیم کشمیر نے کہا ہے کہ اس سلسلے میں ضرورت پڑنے کی صورت میں اضافی کلاس بھی لی جانی چاہیئے۔