۔10برسوں کی مثبت تبدیلی اصلاحات کی آئینہ دار ۔ 7.7فیصد شرح نمو ملک کی مضبوطی کی عکاس:مودی

 عظمیٰ مانٹرینگ ڈیسک

سرینگر//وزیر اعظم نریندر مودی نے ہفتہ کے روز کہا کہ رواں مالی سال کے پہلے6 مہینوں میں ہندوستان کی جی ڈی پی کی شرح نمو7.7 فیصد ملک کی مضبوط ہوتی ہوئی معیشت اور گزشتہ 10 سالوں میں کی گئی تبدیلی پسند اصلاحات کی عکاس ہے۔ سنیچر کو ویڈیو لنک کے ذریعہ گاندھی نگر گفٹ سٹی میں ’انفینٹی فورم 2.0‘ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ان کی حکومت گجرات انٹرنیشنل فائنانس ٹیک (GIFT) سٹی کو نئے دور کی عالمی مالیاتی اور ٹیکنالوجی خدمات کے عالمی اعصابی مرکز میں تبدیل کرنا چاہتی ہے۔انہوںنے کہاکہ اس مالی سال کے پہلے 6 مہینوں میں، ہندوستان نے 7.7 فیصد کی جی ڈی پی کی شرح نمو حاصل کی ہے۔وزیراعظم مودی نے کہاکہ آج پوری دنیا نے ہندوستان پر اپنی امیدیں وابستہ کر رکھی ہیں، اور یہ صرف اپنے آپ پر نہیں ہوا۔

 

مودی نے اپنے افتتاحی خطاب میں کہا کہ یہ ہندوستان کی مضبوط ہوتی ہوئی معیشت اور پچھلے 10 سالوں میں کی گئی تبدیلی پسند اصلاحات کا عکاس ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان آج دنیا میں سب سے تیزی سے ترقی کرنے والی فن ٹیک مارکیٹوں میں سے ایک ہے اور گفٹ انٹرنیشنل فنانشل سروسز سینٹر (IFSC) اس کے مرکز کے طور پر ابھر رہا ہے۔انہوں نے ماہرین پر زور دیا کہ وہ گرین کریڈٹس کے لیے مارکیٹ میکانزم تیار کرنے کے لیے اپنے خیالات کا اشتراک کریں۔ اس موقع پر، وزیراعظم مودی نے گجرات کے لوگوں کو ریاست کے روایتی گربا رقص کو یونیسکو کی’انسانیت کے غیر محسوس ثقافتی ورثے کی نمائندہ فہرست‘میں شامل کرنے پر مبارکباد دی۔اس دوران وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے کہاہے کہ بھارت سب سے تیزی سے ترقی کرنے والی بڑی معیشت بن چکی ہے ،اور اب دوسروں کی ترقی پر مثبت اثر ڈالنے کے قابل ہے۔وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے ہفتہ کو کہاکہ ہندوستان نے ظاہر کیا ہے کہ ترقی اور تقسیم انصاف کے درمیان کوئی ناقابل مصالحت تجارت نہیں ہے، اور حکومت ترقی کے انجن کے طور پر ملک کی پوزیشن کو مزید فروغ دینے کی تمام کوششیں کر رہی ہے۔FICCI کی سالانہ جنرل میٹنگ سے خطاب میں راجناتھ سنگھ نے کہا کہ ہندوستان، دنیا کی سب سے تیزی سے بڑھتی ہوئی بڑی معیشت کے طور پر، اب دوسرے ممالک کی ترقی پر ’مثبت اثر‘ پیدا کرنے کی پوزیشن پر پہنچ گیا ہے۔وزیردفاع نے کہاکہ ہندوستان نے دکھایا کہ ترقی اور تقسیم انصاف کے درمیان کوئی ناقابل مصالحت تجارت نہیں ہے۔انہوں نے مزید کہاکہ اس کا مطلب ہے تمام شہریوں کو منصفانہ مواقع فراہم کرنا اور شرح نمو کو تیز کرنا اور دونوں کو بیک وقت حاصل کیا جا سکتا ہے۔