۔ 5 اساتذہ، 220سے زائد طلباء ، کمرے 3…اندروال کا ہائی سکول ڈمبرکا خدا ہی حافظ | ہیڈماسٹر سمیت تدریسی عملہ کی9 اسامیاں خالی، سکولی عمارت و تدریسی عملہ فراہم کیا جائے: بچے گورنر انتظامیہ سے فریادی

کشتواڑ// ضلع کشتواڑ کے حلقہ اندروال میں قایم ہائی سکول ڈمبر میں 220سے زائد طلباء کیلئے محض 5 اساتذہ تعینات ہیں جبکہ دیگر تدریسی عملہ موجود ہی نہیں جس سے بچوں کو تعلیم حاصل کرنے میں سخت دشواریاں پیش آرہی ہیںجبکہ 220طلباء کے بیٹھنے کیلئے محض تین کمرے ہیںاور بچے کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں۔ دسویں جماعت کی طالبہ عطیہ بانو نے بتایا کہ محض دو یا تین سبجیکٹ ہی ہمیں  پڑھائے جاتے ہیں جبکہ ریاضی و سائینس کے اساتذہ موجودہی نہیں ہیں۔ انہوںنے کہا کہ’’ ہم تعلیم حاصل کرنا چاہتے ہیں لیکن تدریسی عملہ نہ ہونے کے سبب ہماری تعلیم اثرانداز ہورہی ہے‘‘۔نویں جماعت کی طالبہ نے بتایا کہ محض تین کمرے سکول میں ہیں جن میں سے ایک کمرہ سٹاف کیلئے ہے جبکہ دیگر دو کے اندر کلاسیں چلائی جاتی ہیں اور ایک کمرے میں تین کلاسیں چلائی جاتی ہیں جبکہ دیگر بچے کھلے  آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پرمجبور ہیں۔ انھوں نے ضلع انتظامیہ سے و لیفٹیننٹ گونرر انتظامیہ سے اپیل کی کہ انہیں اساتذہ و عمارت فراہم کی جانی چاہئے تاکہ انکا مستقبل روشن ہوسکے اوروہ اپنی تعلیم حاصل کرسکیں۔ مقامی شخص جاوید احمد نے بتایا کہ وہ اپنے بچوں کا داخلہ کرنے کیلئے سکول آئے تھے لیکن اساتذہ نے داخلہ یہ کہہ کر نہیں دیا کہ سکول میں بیٹھنے کیلئے جگہ دستیاب نہیں ہے۔جاوید احمد نے بتایا کہ سکول میں ہیڈماسٹر اور ماسٹر گریڈکی بھی چھ اسامیاں خالی پڑی ہیں جبکہ ٹیچروں کی چھ میں سے دو اسامیاں خالی ہیں۔ انھوں نے ضلع انتظامیہ سے اپیل کی کہ جلد از جلد عمارت فراہم کی جائے بصورت دیگر لوگ سڑکوں پر آکر احتجاج کرینگے ۔