۔.26برسوں سے زیر التواملی ٹینسی متاثرہ معاملات

راجوری//ڈپٹی کمشنر راجوری ملی ٹینسی متاثرہ کنبوں کے ایس آر او 43معاملات کا جائزہ لینے کیلئے افسران کی ایک میٹنگ لی جس دوران کچھ فائلوں کو منظور کیاگیاجبکہ کچھ کے دستاویزات مکمل کرنے کی ہدایت دی گئی ۔میٹنگ میں اے سی آر عبدالقیوم میر ، ایس ڈی ایمز اور تحصیلدار کوٹرنکہ ، خواس ، درہال ، تھنہ منڈی ، راجوری ، قلعہ درہال ، نوشہرہ ، سندر بنی ،بیری پتن ، تریاٹھ اور کالاکوٹ نے بھی شرکت کی ۔اس موقعہ پر170 سے زائد متاثرہ کنبوں نے بھی شرکت کی جن کے 61افراد ملی ٹینسی کے دوران مارے گئے ۔اس دوران متاثرہ افراد کے دستاویزات جن میں پوسٹ مارٹم رپورٹ ،راشن کارڈ ، پولیس رپورٹ ، ایف آئی آر ، اہلیت ، عمر ، شناختی کارڈ وغیرہ شامل ہیں ،کو مکمل کیاگیا۔اس دوران ہر ایک متاثرہ کنبے کیلئے 4لاکھ روپے کا کیس منظور کیاگیا جبکہ حادثے کے وقت انہیں ایک ایک لاکھ روپے دیئے گئے تھے ۔اس دوران کل 47معاملات کو منظور کرلیاگیا جبکہ چودہ دیگر کے کاغذات مکمل کرنے کی ہدایت دی گئی ۔ڈپٹی کمشنر نے افسرا ن و متاثرہ کنبوں کو ہدایت دی کہ وہ باقی ماندہ لوازمات مکمل کریں تاکہ ان فائلوں کوحکام کو روانہ کیاجائے ۔واضح رہے کہ یہ کیس پچھلے دس سے چھبیس برسوں سے زیر التوا پڑے ہوئے تھے ۔