یکم سے 15اگست تک ہوٹل کرائیوں میں 25فیصد چھوٹ مقامی افراد کو سرمایہ کاری کرنے کا موقع فراہم کرنے کا مطالبہ:مشتاق چایہ

نیوز ڈیسک

 

سرینگر//جموںکشمیر ہوٹلریس کلب کی ایک اہم میٹنگ مشتاق احمد چایہ کی قیادت میں منعقد ہوئی جس میں رواں برس جموں کشمیر میں بہتر سیاحتی سیزن پر اطمینان کااظہار کیا گیا ۔ اس کے ساتھ ہی میٹنگ میں سیاحت سے جڑے اداروں خاص کر ہوٹلوں، ریستورانوں اور گیسٹ ہاوسوں کو درپیش مسائل پر بھی بات کی گئی ۔ میٹنگ میں کلب کے جملہ ممبران اور عہدیداران نے شرکت کی ۔میٹنگ میںمشتاق چایا نے بتایا کہ وادی کے سیاحتی مقامات ، گلمرگ، پہلگام ، سونہ مرگ اور دیگر جگہوں پر ہوٹلوں کی لیز کی مدت ایک دیرینہ مسئلہ ہے جس کو لیفٹیننٹ گورنر اور دیگر متعلقہ حکام کے ساتھ اٹھایا گیاہے جنہوںنے اس معاملے کو حل کرنے کی یقین دہانی بھی کرائی ہے،اس معاملے پر فوری طور پر عمل درآمد کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ہوٹل مالکان کو ذہنی کوفت سے نجات ملے ۔

 

انہوں نے بتایا کہ دوسرا بڑا مسئلہ ہوٹلوں ، رستورانوں اور گیسٹ ہاوسوں کی تجدید و مرمت کا کام ہے جس کی برسوں سے اجازت نہیں دی جارہی ہے جس کی وجہ سے ہوٹلوں کی ہیت بگڑ گئی ہے۔مشتاق احمد چایہ نے کہاکہ سرکار کی طرف سے جو سنگل ونڈو سسٹم متعارف کیا گیا ہے اگرچہ یہ ایک اچھا نظام ہے تاہم اس میں بھی ابھی کئی طرح کی خامیاں ہیں جن کو دور کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوںنے بتایا کہ رواں برس جموں کشمیر میں سیاحتی سیزن کافی حوصلہ افزارہا ہے اور سیاحوں کی خاصی تعداد نے وادی کا  رخ کیا جو محکمہ ٹورازم اور ایل جی انتظامیہ کی کاوشوں کا ہی نتیجہ ہے جس کیلئے ہم ان کا شکریہ اداکرتے ہیں اور امید ظاہر کرتے ہیں کہ آئندہ بھی اسی طرح کام ہوتا رہے گا۔ انہوںنے کہاکہ وزیر اعظم نریندر مودی اور ایل جی بار بار کہتے ہیںکہ جموں کشمیر کی ترقی کیلئے باہری سرمایہ کاروں کو یہاں سرمایہ کاری کرنے کی دعوت دی گئی ہے تاہم پہلے یہاں کے مقامی سرمایہ کاروں کے ساتھ بات کی جانی چاہئے ۔

 

مشتاق چایہ نے کہا کہ وادی کشمیر میں بہت سے افراد ایسے ہیں جو یہاں پر سیاحت میں سرمایہ کاری کرسکتے ہیں اسلئے پہلی ترجیح ان افراد کو دی جانی چاہئے ۔میٹنگ میں منظور احمد وانگنو کو چیئرمین انورانمنٹل کمیٹی منتخب کیا گیا  اور ہوٹلرس کلب کی جانب سے انہیں ہر ممکن تعاون دینے کا بھی یقین دلایا گیا ۔ اس موقعہ پر سیکریٹری جنرل طارق گانی نے سیاحوںکو سہولیت فراہم کرتے ہوئے اعلان کیا کہ یکم اگست سے 15اگست تک ہوٹلوں کے کرایہ میں 25فیصد چھوٹ دی جائے گی۔