یوکرین کی فوج نے ڈونباس میں گولے داغے

کیف// یوکرین کی سکیورٹی فورسز نے ملک کے جنوب مشرق میں واقع ڈونیٹسک عوامی جمہوریہ (پی ڈی آر) کی کئی بستیوں پر فائرنگ کی ہے، جن میں منسک کے معاہدوں کے تحت ممنوعہ 120 ملی میٹر کیلیبرکے گولے بھی شامل ہیں۔
 
یہ معلومات جنگ بندی کے نظام پر کنٹرول اور کوآرڈی نیشن کے مشترکہ مرکز کے ڈی پی آر مشن نے دی ہے۔
 
ڈی پی آر حکام نے اتوار کے روز علی الصبح بتایا کہ 120 ملی میٹر کیلیبر کے کل 20 گولے کوموناریوکا اور سٹارومیخائیلیوکا کی بستیوں پر فائر کیے گئے۔ اسی وقت 122 ملی میٹر کیلیبر کے 25 گولے پیٹریوسکے بستی پر بھی فائر کیے گئے۔
 
اس سے قبل گزشتہ رات ڈی پی آر مشن نے کہا کہ یوکرین کی سکیورٹی فورسز نے ڈونیٹسک میں 120 ایم ایم کے گولے فائر کیے جب کہ ڈونیٹسک کے مضافات میں اولیکسینڈریوکا کی بستی پر 122 ایم ایم کے چار گولے فائر کیے گئے۔
 
مشن کے مطابق، اتوار کے اوائل میں ڈی پی آر میں کئی دیگر بستیوں کو بھی دستی بموں اور گولوں سے نشانہ بنایا گیا جو منسک معاہدوں کے تحت ممنوع تھے۔