یوکرین امن مذاکرات ۔6افریقی ممالک کے رہنماؤں کی پیوتن اور زیلنسکی سے ملاقات متوقع

 یو این آئی

جوہانسبرگ//جنوبی افریقہ کے صدر سیرل رامافوسا نے کہا کہ روسی صدر ولادیمیر پیوٹن اور یوکرینی صدر ولادیمیر زیلنسکی نے 6 افریقی ممالک کے حکمرانوں کے ساتھ ملاقاتوں پر اتفاق کیا ہے تاکہ یوکرین میں جنگ کے خاتمے کے ممکنہ منصوبے پر تبادلہ خیال کیا جا سکے ۔

 

 

ڈان کی رپورٹ کے مطابق سیرل رامافوسا نے کہا کہ انہوں نے ولادیمیر پیوٹن اور ولادیمیر زیلنسکی سے ٹیلیفونک رابطہ کیا اور دونوں نے بالترتیب ماسکو اور کیف میں زامبیا، سینیگال، کانگو، یوگنڈا، مصر اور ساؤتھ افریقہ کے رہنماؤں پر مشتمل امن مشن کی میزبانی کرنے پر اتفاق کیا۔انہوں نے کہا کہ میں نے صدر ولادیمیر پیوٹن اور صدر ولادیمیر زیلنسکی دونوں کے ساتھ افریقی سربراہان مملکت کے ساتھ مصروف عمل ہونے کی تیاری شروع کرنے پر اتفاق کیا ہے ، ہم امید کر رہے ہیں کہ ہم متعدد امور پر بات چیت کریں گے ۔انہوں نے یہ بیان ایک ایسے وقت میں دیا جب یوکرین نے چین کے بھیجے گئے خصوصی سفیر کے دورے سے چند گھنٹے قبل راتوں رات روسی ڈرونز اور میزائل مار گرانے کا دعویٰ کیا۔امن مذاکرات کو فروغ دینے کے لیے چین کے خصوصی سفیر کی دو روزہ دورے پر یوکرین پہنچنے کی توقع ہے ۔