یوکرائنی صدر نے نیٹو کو مدعو کرلیا

کیو //  یوکرائنی صدر پیٹرو نے نیٹو سے بحیرہ ازوف میں جنگی جہاز بھیجنے کی درخواست کردی تاکہ روس سے محاز آرائی میں مدد فراہم ہوسکے۔ تفصیلات کے مطابق یوکرائنی صدر پیٹرو کا کہنا ہے کہ نیٹو کے جہازوں کشتیوں کا کام یوکرائن کو سیکیورٹی فراہم کرنا ہے، نیٹو حکام نے بھی یوکرائن کو نیٹو کا رکن نہ ہونے کے باوجود بھرپور حمایت کرنے کا اظہار کیا ہے۔ برطانوی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ یوکرائنی صدر نے روس کے ساتھ حالیہ دنوں کشیدگی میں اضافہ ہونے کے بعد حالات سے نمٹنے کے لیے روس سے ملحقہ علاقوں میں 30 دنوں کے لیے مارشل لاء نافذ کردیا ہے۔ یوکرائنی صدر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ روسی ولادی میر پیوٹن بحیرہ ازوف پر قبضے سے کم نہیں چاہتے۔ ان کا کہنا تھا کہ جرمنی ہمارا سب سے قریبی اتحادی و ساتھی ہے۔