یوٹی میں آکسیجن ، اَدویات اور دیگر بنیادی طبی سہولیات کی کوئی کمی نہیں: بصیر خان | پلوامہ اور شوپیاں میں کووِڈ۔ 19روکتھام اِقدامات کا جائزہ لیا

پلوامہ//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے ڈی سی آفس کمپلیکس پلوامہ میں اَفسران ، پی آرآء / یو ایل بی کے ممبران ، تاجروں اور ٹرانسپورٹر ایسوسی ایشنوں ، پلوامہ اور شوپیاں اَضلاع کے مذہبی رہنماؤں کے ساتھ میٹنگیں منعقد کیں جس میں دونوں اَضلاع میں کووِڈ تخفیف کی کوششوں کا جائزہ لیاگیا۔مشیرنے کہا کہ اِنتظامیہ اور سول سوسائٹی کو کووِڈ کی دوسری لہر سے نمٹنے کے لئے مل بیٹھ کر کام کرنا ہوگا۔ اُنہوں نے اِس وَبائی مرض سے نمٹنے کے لئے پنچایتی راج اِداروں ، شہری لوکل باڈیز ممبران ، مقامی اَوقاف کمیٹیوں ، تاجروں ، ٹرانسپورٹروں، مذہبی رہنماؤں اور سول سوسائٹی کی فعال شمولیت پر زور دیا۔ اُنہوں نے مقرر کردہ ہدایات اور آپریٹنگ طریقۂ کار کے مطابق صورتحال سے نمٹنے پر زور دیا ۔اُنہوں نے کہا کہ سب کو مہلک بیماری سے نمٹنے کے لئے اَپنا کردار اَدا کرنا ہوگا۔ اُنہوں نے شرکأ سے پر زور ایپل کی کہ کووِڈ۔19وائرس  پر قابو پانے کے لئے اِنتظامیہ کے ساتھ تعاون کریں ۔وباکے خاتمے کے لئے اِنفارمیشن ایجوکیشن اور مواصلات کی سرگرمیوں کی اہمیت کو اُجاگر کرتے ہوئے مشیر نے علماء کرام پر زور دیا کہ وہ مساجد ، خانقاہوں اور زیارت گاہوں سے باقاعدہ اعلان کریں اور لوگوں کو ماسک پہننے ، سماجی دوری برقرار رکھنے اور ہاتھوں کو صاف کرنے جیسے احتیاطی اِقدامات پر عمل پیرا رہنے کوبتائیں ۔ اُنہوں نے کہا کہ یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم حالات کو آسانی سے نمٹنے کے لئے کارکردگی کا مظاہرہ کریں۔ اُنہوں نے لوگوں کو طبی ہنگامی صورتحال کے علاوہ لوگوں کو معلومات کی فراہمی کے لئے ہیلپ لائنوں کے مناسب استعمال کی بھی تاکید کی۔ بصیر خان نے کہاکہ یوٹی میں آکسیجن ، اَدویات اور دیگر بنیادی طبی سہولیات کی کوئی کمی نہیں ہے اور لوگوں سے گزارش ہے کہ وہ اَفواہوں پر توجہ نہ دیں۔مشیر نے ہدایت دی کہ وہ کووِڈ مخالف ٹیکہ کاری مہم کو تیز کریں۔ انہوں نے صنعتی علاقوں میں کام کرنے والے تمام مزدوروں اور ان اضلاع کے مختلف علاقوں میں کرایے پر رہائش پذیر افراد کو ٹیسٹنگ اور ٹیکے لگوانے کی بھی ہدایت دی۔بصیر خان نے اس بات کو یقینی بنانے کی تاکید کی کہ روزگار پروگراموں جیسے کہ منریگا اور زرعی کاموں کو آسانی سے جاری رکھا جائے ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ حکومت اِس ضمن میں مدبرانہ اِقدامات اُٹھا رہی ہے۔مشیر بصیرخان نے آنے والے تہواروں کے پیش نظر تاجروں کو ہدایت دی کہ وہ اِس بات کو یقینی بنائے کہ کسی بھی صارف کو ماسک کے بغیر دکانوں میں داخل ہونے کی اجازت نہ دی جائے۔ اُنہوں نے تاجروں اور ٹرانسپورٹروں کے وفود کو کووِڈ کے رہنما اصولوں اور پابندیوں پر عمل پیرا رہنے کی تاکید کی۔اس سے قبل ضلع ترقیاتی کمشنر پلوامہ بصیر الحق چودھری اور ضلع ترقیاتی کمشنر شوپیاں سچن کمار نے مشیر کو اپنے متعلقہ اَضلاع میں اب تک کی حصولیابیوں کے علاوہ کووِڈ اِنتظامی انتظامات سے متعلق بھی جانکاری دی۔پلوامہ کے ضلع ترقیاتی کمشنر نے کہا کہ ضلع میں ایک منٹ میں 1300 ایم پی ایل آکسیجن جنریٹ کی جاتی ہے۔ ضلع ترقیاتی کمشنر شوپیان نے شوپیان ضلع میں کووِڈ مینجمنٹ پوزیشن سے متعلق تفصیلات دیں۔