یونسو ہندوارہ معرکہ آرائی:فورسز نہتے انسانوں کا بے دریغ خون بہانے میں مصروف

 سرینگر//حریت (ع)، لبریشن فرنٹ،جماعت اسلامی، لبریشن فرنٹ (ح)، تحریک مزاحمت اورسالویشن مومنٹ نے یونسو ہندوارہ میں فورسز کے ہاتھوں جاں بحق ہوئے تین عسکریت پسندوں اورایک خاتون مصرہ بانوکو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ  جموںو کشمیر  کے چپے چپے میںرواں تحریک آزادی کے دوران جوانوں ، بزرگوں ، معصوم بچوں اور خواتین نے بھی اپنے قیمتی خون کا نذرانہ پیش کیا ۔حریت (ع) ترجمان نے فورسز کے ہاتھوں ایک پردہ نشین خاتون مصرہ بانو کو بے دردی سے جاں بحق کرنے اور معرکہ آرائی کے دوران جاں بحق کئے گئے تین عسکریت پسندوںکوخراج عقیدت اداکرتے ہوئے کہا کہ جموںو کشمیر کے چپے چپے میںرواں تحریک آزادی کے دوران جوانوں ، بزرگوں ، معصوم بچوں اور پردہ نشین خواتین نے اپنے قیمتی خون کا نذرانہ پیش کیا ہے ۔ترجمان نے کہا کہ تحریک آزادی کو منطقی انجام تک پہنچانامزاحمتی قیادت اور حریت پسند عوام کی مشترکہ ذمہ داری ہے ۔ترجمان نے کہا کہ کشمیر میں تعینات فورسز خود کو حاصل بے پناہ اختیارات کا بڑی بے دردی کے ساتھ استعمال کرکے نہتے شہریوںکو بڑی بے دردی سے اپنی جارحیت کا نشانہ بنارہی ہیں جو حد درجہ تشویشناک ہے۔ترجمان نے کہا کہ کشمیر میں جاری خون خرابہ ، قتل و غارت اوربنیادی انسانی حقوق کی پامالیاں دراصل دیرینہ مسئلہ کشمیر کا شاخسانہ ہے جس کے حل نہ ہونے کے سبب اب تک ہزاروںافرادجاں بحق کئے جاچکے ہیں اور یہ سلسلہ برابر جاری ہے ۔ترجمان نے کیلرشوپیاں میں بنک کی cash van پر حملے کے نتیجے میں دو اہلکاروں مشتاق احمد، طارق احمد کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے مہلوکین کے عزیز و اقارب کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا۔ لبریشن فرنٹ کے محبوس چیئرمین محمد یاسین ملک نے مصرہ بانوکو خراج عقیدت ادا کیا ہے۔ اس معصوم خاتون کے بہیمانہ قتل کو بھارتی فورسز کی بربریت کی مثال قرار دیتے ہوئے یاسین ملک نے کہا کہ قتل و غارت اور انسانی خون بہانے کے خوگر اپنے حکمرانوں کی جانب سے تفویض کی گئی کھلی چھوٹ کے تحت انسانوں کا بے دریغ خون بہانے میں مصروف ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ کشمیر کے جنوب و شمال میں فورسز نے جو قہر سامانیاں برپا کی ہیں وہ ہر لحاظ سے مذموم ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیریوں پر ڈھائے جانے والے ان مظالم اور قتل و غارت کیلئے ہند نواز سیاست کار ،ان کی جماعتیں اور جملہ اسمبلی ممبران براہ راست ذمہ دار ہیں کیونکہ یہی لوگ فورسز کو قانونی جواز فراہم کرتے ہیں۔جماعت اسلامی ترجمان ایڈوکیٹ زاہد علی نے خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ یونسو ہندوارہ میں فورسز اہلکاروں نے جس بے دردی سے ایک جواں سال خاتون کو بلاکسی جواز کے فائرنگ کی زد میں لاکر قتل کردیا ہے ،اس سے ان کے کشمیریوں کے تئیں بُرے عزائم ظاہر ہوجاتے ہیں۔ زاہد علی نے ایک بیان میں کہا کہ محاصروں کے دوران ظلم و زیادتیوں کے خلاف جب بھی یہاں کے معصوم لوگ احتجاج کرنے کی کوشش کرتے ہیں تو اُن کو گولیوں اوردیگر انسان کش ہتھیاروں سے استقبال کیا جاتا ہے۔جماعت اسلامی نے مصرہ بانو نامی خاتون کے لواحقین سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے عالمی اداروں پر زور دیا ہے کہ وہ اس ظلم و ستم کو رکوانے اور عوام کو حق خود ارادیت کا بنیادی حق دلوانے کی خاطر مؤثر اقدامات کریں۔ لبریشن فرنٹ (ح)چیئرمین جاوید احمد میرنے جاں بحق کی گئی خاتون کو خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے انسانی حقوق کے عالمی اداروں سے مداخلت کی اپیل کی ہے۔ تحریک مزاحمت کے سربراہ بلال احمد صدیقی نے اپنے ایک بیان میں یونسو ہندوارہ میں لشکر طیبہ سے وابستہ عساکر اورمصرہ بانوکے جاں بحق ہونے پر انہیں خراج عقیدت ادا کیا۔انہوں نے کہا کہ ان قربانیوں کا وقار رکھنا ، ان کے مشن کو تکمیل تک پہنچانا ہم سب کی اجتماعی ذمہ داری ہے۔سالویشن مومنٹ چیئرمین ظفر اکبر بٹ نے خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے کہا کہ ابھی دنیا انسانی حقوق کا دن ہی منا رہی تھی کہ فورسز نے کشمیر میں مصرہ بانو نامی خاتون کا قتل کرکے اس بات کو ثابت کیا کہ فورسز کوکسی بھی قانون یا عالمی برادری کی پرواہ نہیں۔