یورپی پارلیمنٹ ممبران کا کشمیر میں پیلٹ کے استعمال پر پابندی کا مطالبہ، وزیر اعظم کے نام خط

سرینگر/پچاس سے زائد پورپی پارلیمنٹ ممبران نے وزیر اعظم نریندر مودی کے نام ایک خط لکھ کر کشمیر میں پیلٹ بندوقوں کے استعمال پر پابندی کا مطالبہ کیا ہے۔

 مارچ25کو اپنے مشترکہ خط میں مذکورہ ممبران پارلیمان نے لکھا ہے'' ہم یورپی پارلیمنٹ میں منتخب نمائندوں کی حیثیت سے کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہیں''۔

خط میں ممبران نے لکھا کہ وہ خاص کر کشمیر میں پیلٹ بندوقوں کے استعمال پر تشویش کا شکار ہیں جس کی وجہ سے سینکڑوں کشمیری تکلیف میں مبتلاء ہوئے ہیں، متعدد کی آنکھیں چلی گئی ہیں جبکہ کچھ کو اپنی جانوں سے ہی ہاتھ دھونے پڑے ہیں ۔

مذکورہ ممبران نے بی بی سی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ کس طرح ایک19ماہ کے بچے کو پیلٹ بندوق نے انتہائی بُری طرح زخمی کردیا۔انہوں نے جموں کشمیر میں آرمڈ فورسز سپیشل پائورس ایکٹ (افسپا) اور پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے)جیسے سخت قوانین کے مسلسل نفاذ پر بھی شدید تشویش کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے وزیر اعظم مودی پر زور دیا کہ وہ کشمیر میں پیلٹ گن کے استعمال پر فوری پابندی عاید کریں اوریہاں کی صورتحال کو انسانی حقوق کے بین الاقوامی معیار تک لائیں۔

انہوں نے افسپا1990اورپی ایس اے1978کو ختم کرنے کی بھی مانگ کی ہے۔