یمن میں خونریز لڑائی،تین روز میں 200سے زائد باغی ہلاک

صنعا،یکم //یمن کے 2 صوبوں میں سرکاری فوج کے ہاتھوں متعدد کمانڈروں سمیت 200 سے زائد حوثی باغی ہلاک ہو گئے ۔بین الاقوامی میڈیا کے مطابق یمن کے 2 صوبوں صعدہ اور حجہ میں گزشتہ 3 روز کے دوران یمنی فوج کے ساتھ لڑائی میں متعدد کمانڈروں سمیت 200 سے زیادہ حوثی جنگجو ہلاک اور بیسیوں زخمی ہوگئے ہیں۔حجہ میں ذرائع نے بتایا ہے کہ فوج نے حوثی ملیشیا کے بیلسٹک میزائل چلانے کے پیڈ تباہ کر دیے ہیں جبکہ عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے حوثی ملیشیا کے 18 اڈوں کو اپنے حملوں میں نشانہ بنایا ہے ، صوبہ البیضا میں بھی لڑائی میں 12 حوثی جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔یمنی فوج نے شمالی صوبے صعدہ کے مختلف علاقوں میں حوثی ملیشیا کے خلاف لڑائی میں پیش قدمی جاری رکھی ہے اور وہاں مختلف محاذوں پر ان کے درمیان خونریز جھڑپوں کی اطلاعات ملی ہیں۔یمن فوج نے صعدہ کے دو علاقوں ثحر اور بکیل المیر پر قبضہ کر لیا ہے ۔اس سے قبل یمنی فوج نے ضلع حیران پر دوبارہ کنٹرول حاصل کر لیا تھا، حوثی ملیشیا کو صعدہ کے علاقے میران میں سرکاری فوج کے ساتھ جھڑپوں میں بھاری جانی نقصان اٹھانا پڑا ہے اور وہاں لڑائی میں اس کے 3 کمانڈر احمد یحیی النعمانی ، صلاح محمد جعادر اور صلاح محمد علی بداش ہلاک ہوگئے ہیں۔عسکری ذرائع کے مطابق یمنی فوج نے صعدہ اور حجہ کے 3 اضلاع میں متعدد دیہات اور علاقوں کو حوثیوں کے قبضے سے آزاد کرا لیا ہے۔ یو این آئی