ہیلتھ سنٹر دربگام کی منتقلی کے خلاف مقامی آبادی برہم

سرینگر/ /دربگام پائین کے لوگوں نے ڈائریکٹر ہیلتھ کو طبی مرکز کی منتقلی سے متعلق اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے انہیں ایک یاداشت پیش کی اور طبی مرکز کی منتقلی کے بعد پیدا شدہ صورتحال سے آگاہ کیا ۔دربگام پائین میں قریباً تیس سال قبل ایک طبی مرکز قائم کیاگیا۔مقامی اوقاف کمیٹی کے مطابق اس طبی مرکز کیلئے انہوں نے بلامعاوضہ زمین بھی فراہم کی ہے۔تاہم چیف میڈکل آفسر نے نامعلوم وجوہات کی بناء پر اس سینٹر کو علاقے سے پانچ کلو میٹر دور دربگام بالا منتقل کرکے لوگوں کے حقوق سلب کئے جارہے ہیں۔مقامی لوگوں نے اس فیصلے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ اس جانبدارانہ فیصلے سے کریوہ دربگام ،چونٹی واڈہ اور شیرباغ پلوامہ کے تیس ہزار کنبوں کو شدید مشکلات سے دوچار ہونا پڑے گا۔مقامی لوگوں نے لیفٹیننٹ گورنر اور صوبائی انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ لوگوں کے جذبات و احساسات کو ملحوظ نظر رکھتے ہوئے دربگام پائین میں قائم پرائمری ہیلتھ سینٹر پر دوبارہ طبی عملے کو تعینات کردیا جائے تاکہ لوگوں کے مشکلات کا ازالہ ہوسکے۔