ہند۔یورپی یونین اسٹریٹجک پارٹنرشپ

یو این آئی

نئی دہلی//ہندوستان اور یوروپی یونین (ای یو) نے تجارت، موسمیاتی تبدیلی، ڈیجیٹل ٹیکنالوجی اور عوام سے عوام کے رابطوں کے شعبوں میں تعاون کو تیز اور گہرا کرنے کا عزم کیا۔ وزیر اعظم نریندر مودی اور یورپی کمیشن کے صدر ارسلا وان ڈیر لین کے درمیان انڈیا-یورپی یونین بزنس و ٹیکنیکل کونسل کے قیام کا فیصلہ یہاں سات لوک کلیان مارگ پر واقع وزیر اعظم کی رہائش گاہ پر میٹنگ کے دوران لیا گیا۔وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ مسٹر مودی اور یوروپی کمیشن کے صدر کے درمیان کل یہاں ملاقات میں دونوں لیڈروں نے ہندوستان-یورپی یونین اسٹریٹجک پارٹنرشپ میںپیش رفت کا جائزہ لیا اور تجارت، موسمیاتی تبدیلی کے شعبوں میں تعاون کی حوصلہ افزائی کی۔ یوروپی کمیشن کے صدر نے کہا کہ ہندوستان اور یورپی یونین کے درمیان سفارتی تعلقات کی 60ویں سالگرہ کے سال میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات پہلے سے کہیں زیادہ اہم ہو گئے ہیں۔ ہم متحرک جمہوریتیں اور بڑی معیشتیں ہیں اور ہم میں بہت سی مماثلتیں ہیں لیکن ہمیں چیلنجز کا سامنا ہے ۔ اس لیے آج کی میٹنگ بہت قابل تعریف ہے ۔ یورپی کمیشن کے صدر اتوار کو ہندوستان کے دو روزہ دورے پر یہاں پہنچے ۔ وزیر اعظم سے ملاقات سے پہلے وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے ان سے ملاقات کی۔ وہ شام کو وزارت خارجہ اور مبصرین ریسرچ فاؤنڈیشن کی طرف سے جیو پولیٹکس اور جیو اکنامکس پر رائسینا ڈائیلاگ کے افتتاحی اجلاس میں شرکت کریں گی۔