ہندواڑہ کے شخص کی پنجاب میں لاش برآمد| اہل خانہ کو قتل کا خدشہ

 
ہندواڑہ//ہندواڑہ کے سراج پور علاقے کا ایک 36سالہ شخص لاپتہ ہونے کے ایک دن بعد جمعرات کو پنجاب کے فیروز پور علاقے میں پراسرار حالات میں مردہ پایا گیا۔
 
شخص کے اہلِ خانہ نے الزام لگایا کہ اسے قتل کر دیا گیا ہے۔
 
کشمیر نیوز سروس (کے این ایس) کے مطابق مشتاق احمد میر ولد حبیب اللہ میر جو کہ فیروز پور میں شالیں بیچتا تھا آج صبح پراسرار حالات میں مردہ پایا گیا۔
 
دریں اثناء خاندان کے ایک فرد نے کے این ایس کو بتایا کہ مشتاق ہر سال شالیں بیچنے کے لیے پنجاب جاتا تھا اور عام طور پر کم از کم 4سے5ماہ تک وہاں رہتا تھا۔
 
اُنہوں نے مزید بتایا کہ جمعرات کو مشتاق کا فون بند ہو گیا تھا، جس کے بعد اس کے ساتھیوں نے وہاں کے قریبی پولیس اسٹیشن میں گمشدگی کی شکایت درج کرائی۔ اگلے دن وہ قریبی کھیتوں میں مردہ پایا گیا۔
 
اہل خانہ نے الزام لگایا کہ اسے قتل کیا گیا ہے اور واقعہ کی مکمل تحقیقات کی جانی چاہئے۔ 
 
دریں اثنا، مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر پیپلز کانفرنس کے چیئرمین سجاد لون نے خاندان کے لیے انصاف کا مطالبہ کیا۔
 
انہوں نے ٹویٹ کیا، "سراج پورہ ہندواڑہ، کشمیر کے مشتاق اے میر فیروز پور پنجاب میں مردہ پائے گئے ہیں۔ خاندان کا کہنا ہے کہ گلا دبا کر یا پھانسی پر لٹکاکراسے قتل کیا گیا"۔