ہندوارہ فورسز آپریشن کے دوران شمالی کشمیر میں طویل عرصہ سے سرگرم حزب کمانڈرجاں بحق

سری نگر// پولیس نے بدھ کے روز بتایا کہ شمالی کشمیر کے ہندوارہ علاقے میں جنگجوﺅں اور فورسز کے مابین ہوئی جھڑپ کے دوران حزب المجاہدین کا ایک اعلیٰ کمانڈر جاں بحق ہوا ہے جو ایک طویل عرصہ سے شمالی کشمیر میں سرگرم تھا۔
 یہ معرکہ گذشتہ شب اُس وقت شروع ہوگیا جب پولیس اور فورسز نے مشترکہ طور ہندوارہ کے پازی پورہ کرالہ گنڈ علاقے میں تلاشی آپریشن شروع کیا۔
پولیس نے جاں بحق حزب کمانڈر کی شناخت معراج الدین حلوائی عرف عبید کے طور کرتے ہوئے کہا کہ معراج الدین حزب  کمانڈر  برہان  وانی  کے  وقت  سے  سرگرم  تھا  اور  اسی طرح شمالی کشمیر میں ایکٹیو تھا جس طرح جنوبی کشمیر میں برہان وانی سرگرم تھا۔
 انسپکٹر جنرل آف پولیس وجے کمار نے معراج کو جاں بحق کئے جانے کو ”بڑی کامیابی “ قرار دیا ہے۔
پولیس بیان
ایک پولیس بیان کے مطابق شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے خوشحال مٹو سوپور کے رہائشی حزب کمانڈر معراج الدین حلوائی عرف عبید کو پولیس اور ایس ایس بی کی مشترکہ ٹیم نے ایک ناکے پر گرفتار کیا۔ 
پولیس نے بتایا کہ عبید سے پوچھ گچھ کے بعد ہندوارہ کے کرالہ گنڈ پازی پورہ ،رینن علاقے میں پولیس ، آرمی ، سی آر پی ایف اور ایس ایس بی کے ذریعہ ایک سے زیادہ سرچ آپریشن شروع کئے گئے۔
پولیس نے بتایا کہ ایک مقام پر پہنچنے پر عبید نے ”اپنی چھپائی گئی اے کے 47 رائفل اٹھائی اور سرچ پارٹی پر اندھا دھند فائرنگ شروع کردی جس کے نتیجے میں انکاونٹر شروع اور جس میںوہ مارا گیا “۔
پولیس نے بتایا کہ عبید کے قبضے سے رائفل بر آمد کی گئی۔
 پولیس کے مطابق عبید جولائی 2013 میں انتو حمام سوپور کے ایس پی او مدثر احمد ڈار ، گور پورہ بومئی کے سرپنچ حبیب اللہ میر ، ہائگام سوپور میں چار پولیس اہلکار ، دو حریت کارکن سابق عسکریت پسند معراج الدین ساکن بادمباغ سوپورسمیت کئی شہریوں اور فورسز اہلکاروںکے قتل میں پولیس ملوث تھا۔ 
 پولیس کے مطابق عبید حزب اختلاف کے اعلی کمانڈر برہان وانی کا ہم عصر تھا جسے فورسز نے 8 جولائی 2016 کو جنوبی کشمیر کے اننت ناگ کے ضلع میں جاں بحق کیا۔