ہمیں اپنے حقوق دئے جائیں | ایس آر ٹی سی محکمہ کے رضاکارانہ طور سبکدوش ملازمین کا احتجاج

سرینگر// سٹیٹ روڑ ٹرانسپورٹ کارپوریشن سے رضاکارانہ طور سبکدوش ہوئے ملازمین نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ محکمہ اور محکمہ خزانہ کی ٹال مٹول پالیسیوں نے انہیں سڑکوں پر آنے کیلئے مجبور کیا۔ پریس کالونی میں سنیچر کو احتجاج کرتے ہوئے ان ملازمین کی ایسوسی ایشن کے صدر محمد اشرف کھانڈے نے کہا ’’ ہمارے مطالبات گزشتہ بارہ برسوں سے التوا میں ہیں‘‘۔انہوں نے کہا ’’ ہم قریب 750 ملازمین ہیں جنہوں نے رضاکارانہ طور پر ملازمت سے سبکدوشی اختیار کی تھی لیکن ہمارے مسئلہ کو دو محکموں نے آپس میں محاذ بنا رکھا ہے‘‘۔انہوں نے مزید کہا’’ہمیں اس وقت کہا گیا تھا کہ دو مہینوں کے اندر سارے مراعات و حقوق دئے جائیں گے لیکن آج تک ہم نے صرف 60 فیصد اپنا حق حاصل کیا ہے جبکہ 40فیصد ابھی باقی ہے‘‘۔ صدر موصوف نے کہا کہ محکمہ فائنانس اور جے کے ایس آر ٹی سی کی ٹال مٹول پالیسیوں کی وجہ سے غریب ملازمین پس رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ محکمہ ایس آر ٹی سی کی سست رفتاری کی وجہ سے اُن کے مسائل حل نہیں ہو رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا ’’ ہم کوئی بھیک نہیں مانگ رہے ہیں بلکہ اپنے حقوق کا مطالبہ کر رہے ہیں‘‘۔احتجاجی سبکدوش ملازمین نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے اس سلسلے میں مداخلت کی اپیل کی۔