ہسپلوٹ ۔پنگائی سڑک

 تھنہ منڈی// سڑکوں کو کسی بھی علاقے کی شہ رگ کہاجاتاہے لیکن جب ان کی تعمیر منصوبہ بندی سے نہ ہو تو پھر یہ تباہی و نقصان کا سبب بھی بن جاتی ہیں ۔محکمہ PMGSY کی طرف سے ہسپلوٹ سے پنگائی 13 کلو میٹرطویل سڑک تعمیر کی جارہی ہے جس کی ناقص منصوبہ بندی کے نتیجہ میں سینکڑوں کنال اراضی سے فصلیں تباہ ہوگئی ہیں اور نہ لوگوں کو بہتر سڑک روابط ملے اور نہ ہی فصلیں رہیں۔منگلوار کی شام کو ہونے والی بارش سے اس سڑک کے کلو میٹر نمبر 1 رینہ محلہ میں مکی کی فصل تباہ ہو گئی ۔محلہ کے لوگوں کا کہنا ہے کہ محکمہ کے انجینئروںنے سڑک پرغلط طریقہ سے کلورٹ تعمیر کئے ہیں جس کا خمیازہ انہیں بھگتناپڑرہاہے۔ انہوں نے کہاکہ ہرسال برسات کے موسم میں پانی کے تیز بہائوسے مکی کی فصل تباہ ہو جاتی ہے اور ان کی سال بھر کی کمائی مٹی میں مل جاتی ہے ۔ انہوںنے اس سلسلے میں محکمہ کو کئی مرتبہ اپیل بھی کی گئی لیکن اس نے کوئی توجہ نہیں دی۔ان کاکہناہے کہ کلورٹ سے آنے والے پانی کو تقسیم کیاجائے تاکہ آئندہ انہیں نقصان سے دوچار نہ ہوناپڑے ۔