ہریانہ میں مسجد کے امام کی مار پیٹ کیخلاف پونچھ میں احتجاج

پونچھ//ہریانہ کی کسی مسجد کے امام کی مار پٹائی کرنے پر یوتھ ایسوسی ایشن سروس آف ہیومین اینڈ نیشن (YASHAN) کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرین نے بجرنگ دل،آر ایس ایس ، ویشو ہندو پریشد اور بھارتیہ جنتا پارٹی کے خلاف سخت نعرے بازی کرتے ہوئے اپنے غم و غصہ کا اظہار کیا ۔ مظاہرین کی جانب سے ان تمام تنظیموں کے پتلے بھی جلائے گئے۔یشن تنظیم کے چیئرمین امتیاز احمد سلاریہ نے کہا کہ ہندوستان ایک ایسا ملک ہے جہاں ہر مکتب فکر اپنے عقیدے کے مطابق اپنی زندگی گزار سکتا ہے لیکن افسوس کہ کچھ غنڈہ عنصر تنظیمیں یہاں کے بھائی چارہ کو توڑنا چاہتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہریانہ کی مسجد کے امام سے بدسلوکی کرنا اور ان کی مار پیٹ ہندوستانی آئین کے بالکل منافی ہے جس کی وہ پرزور مذمت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ شیو سینا ، بجرنگ دل، وشیو ہندو پریشد جیسی تنظیمیں دہشت گردی کا راستہ اپنائے ہوئے ہیں جن کے خلاف مرکزی حکومت کو سخت اقدام کرنا ہو گا۔انہوں نے مزید کہا کہ پونچھ کے لوگ امن پسند ہیں اسلئے وہ یہ نہیں چاہتے کہ ان کی وجہ سے یہاں کے امن میں خلل پڑے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ مرکزی حکومت ہریانہ میں ہوئے سانحہ میں ملوث تمام غنڈوں کو تلاش کر کے انہیں سخت سے سخت سزا دے تاکہ دوسروں کو اس سے عبرت حاصل ہوسکے۔