ہجوا کے آتشزدگی متاثرین میں

بانہال // چند روز قبل مہو منگت کے ہجواہ علاقے میں آگ کی ایک ہولناک واردات میں ایک درجن سے زائد مکانوںکے 32 مکین کھلے آسمان کے نیچے بے یارو مددگار آگئے ہیں اور ان متاثرین کی مدد کیلئے جہاں عوام سے ہر ممکن مدد کی اپیل کی جارہی ہے، وہیں مختلف رضاکار انجمیں اپنی حیثیت کے مطابق آگ متاثرین کی بھر پور مدد کیلئے میدان میں ہیں تاکہ متاثرہ کنبے اپنی زندگی کی گاڑی کو واپس معمول کی پٹری پر لاسکیں۔اس سلسلے میں مہو منگت کی ایک مقامی رضاکار تنظیم"سلام فاونڈیشن" نے جمعہ کے روز ایک امدادی ٹیم انجمن کے صدر قاری امتیاز کی نگرانی میں ہجو کے متاثرین تک اشیاء خوردنی و نوش کی چیزوں سمیت 15کونٹل راشن اورکمبل تقسیم کرنے کیلئے متاثرہ علاقے میں پہنچے۔
سلام فاونڈیشن مہو کے ترجمان اور سرگرم رکن شوکت جاوید نے کہا کہ سلام فاونڈیشن کی ٹیم نے اتشزدگی متاثرہ 32 کنبوں میں فی کنبہ کے حساب سے پچاس کلو چاول ، بیس کلو آٹا ، پانچ کلو نمک ، دو کلوم سرسوں کا تیل ، ایک ایک کلو ہلدی اور مرچ ، ایک کلو چائے اور ہر گھر کیلئے ایک ایک کوریا کمبل تقسیم کی ہیں جبکہ مہو کی مقامی امدادی کمیٹی کو بھی ہجوا آگ متاثرین کے حق میں دس ہزار روپئے کی نقدی رقم کا عطیہ بھی پیش کیا ہے۔ سلام فاونڈیشن نے تمام لوگوں سماجی اور رضاکار انجمنوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنی بساط کے مطابق ہجو متاثرین کی مدد کیلئے سامنے ائیں۔