گیلانی کی خانہ نظر بندی

 سرینگر// حریت (گ) نے کہا ہے کہ سید علی گیلانی کو مسلسل گزشتہ 9 سال سے گھر میں نظربند رکھا گیا ہے۔گیلانی کی مسلسل گھر میں نظربندی کی بھی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا گیاکہ ان کی سیاسی، مذہبی اور یہاں تک کہ نجی سرگرمیوں پر مکمل پابندی ہے۔ آزادی پسند رہنما کو نمازِ جمعہ جیسے اہم دینی فریضے سے بھی محروم رکھا جارہا ہے اور سالہا سال سے انہیں مسجد شریف تک بھی جانے نہیں دیا جاتا ہے۔ گیلانی کو صرف بندوق کی نوک پر یرغمال رکھا گیا ہے اور انہیں اپنے گھر کے دروازے سے کبھی باہر آنے نہیں دیا جاتا ہے۔ ملاقات کے لئے آنے والے لوگوں سے زبردست پوچھ گچھ کی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ریاستی دہشت گردی کا بدترین مظاہرہ ہے اور اس کا کوئی آئینی یا اخلاقی جواز موجود نہیں ہے۔