گیارہویں کے امتحانات بورڈ کے تحت

ڈوڈہ//آج ضلع صدر مقام ڈوڈہ میں مختلف اسکولوں کے گیارہویں جماعت کے طلباء نے جموں و کشمیر سٹیٹ بورڈ آف سکول ایجوکیشن کے خلاف مظاہرے کئے اور محکمہ تعلیم کے اعلیٰ حکام کے خلاف بچّوں کے مستقبل کو خراب کرنے کا الزام عائد کیا ۔گیارہویں جماعت کے احتجاجی طلباء کا کہنا تھا کہ آج مذکورہ جماعت کا بورڈ نہیں ہوتا تھا اور یہ سلسلہ گزشتہ کئی برسوں سے چلا آ رہا ہے لیکن آج اچانک گیارہویں کلاس کو بورڈ کلاس کے زمرے میں شامل کیا گیا ہے جس سے طلباء نے تحفظات کا اظہار کیا اور کہا کہ امتحان اب نزدیک آ رہے ہیں اور سلیبس بھی مکمل نہیں ہوا ہے ایسے میں بورڈ امتحان کو پاس کرنا بہت ہی مشکل ہے طلباء کا احتجاج ضلع ترقیاتی کمشنر ڈوڈہ کے دفتر تک گیا طلباء  نے اپنے مسائل پر مشتمل یاداشت کو ڈی ڈی سی کے سامنے پیش کی۔ ضلع ترقیاتی کمشنر ڈوڈہ نے احتجاجی طلباء کو یقین دلاتے ہوئے کہا کہ  اس معاملہ کے حوالے سے محکمہ تعلیم کے اعلیٰ حکام کو مطلع کیاجائے گا،جس کے بعد احتجاج ختم ہوا۔