گھوڑانک کی عوام گزشتہ تین ماہ سے پانی سے محروم

منڈی//تحصیل منڈی کے علاقہ گھوڑانک کی عوام گزشتہ تین ماہ سے پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں جس کی وجہ سے وہ کئی کلو میٹر کی پیدل مسافت طے کر کے پینے کا صاف پانی لانے پر مجبور ہو چکے ہیں ۔ تحصیل صدر مقام منڈی سے دس کلو میٹر دوری پر واقع گھوڑانک کی عوام گزشتہ تیں ماہ سے پینے کے پانی کے لیے ترس رہے ہیں ایک ہزار سے زائد نفوس پر مشتمل اس گاوں کے زن و مرد کو چار کلو میٹر پیدل سفر کر کے اپنے گھروں کے لئے پینے کا پانی جمع کر نا پڑتا ہے ۔گھوڑا نک علاقہ پنچایت پلیرہ اے کے تحت پڑتا ہے۔ سرپنچ گھوڑانک اعجاز احمد تانترے نے کشمیر عظمی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کی پنچایت پلیرہ اے میں پڑنے والا علاقہ گھوڑانک کی عوام کو پانی نہ ہونے کی وجہ سے کافی مشکلات کا سامناکرنا پڑ رہا ہے ان کا کہنا تھا کہ اس سلسلہ میں انہوں نے متعلقہ محکمہ کے اعلی آفسران سے بھی رجوع کیا تاہم اس سلسلہ میں کوئی بھی مثبت جواب نہیں ملا اور اب لوگ کئی کلو میٹر کی مسافت طے کر کے پینے کا صاف پانی جمع کر نے پر مجبو رہو چکے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ماہ صیام میں بھی انتظامیہ کی جانب سے پینے کا صاف پانی فراہم نہیں کیا جارہاہے جس کی وجہ سے لوگوں کو عبادت و دیگر رسومات میں شدید دقتوں کا سامنا کرنا پڑرہاہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ عوام کو پینے کا صاف پانی فراہم کرنے کیلئے متعلقہ محکموں کو ہدایت جاری کی جائیں ۔