گول کینٹھ روڈ کی حالت ناگفتہ بہہ

گول//گول سے کینٹھہ تقریباً پندر کلو میٹر سڑک کی حالت نہایت ہی خستہ ہے جس پر انسانوں کو بھی چلنا دشوار بن چکا ہے اس سڑک پر کئی سالوں سے تعمیری کام لگا ہوا ہے لیکن غیر معیاری میٹریل کے استعمال ہونے پر لاکھوں کے ڈنگے زمین بوس ہو گئے لیکن اس پر آج تک کسی نے بھی کوئی کارروائی نہیں کی ۔ کئی مرتبہ گریف کے اعلیٰ حکام سے بھی رابطہ کیا تھا لیکن ٹال مٹول سے ہی کام لیا جا رہا ہے۔ گول میں ایک میٹنگ کے دوران گریف کے ایک آفیسر نے کہا کہ گراٹ موڑ تک ایک سال مزید لگ سکتا ہے سڑک کی بہتر بنانے کو اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ مزید دہائیوں کی ضرورت ہے گول تک بہتر روڈ کی ۔اس روڈ کی بہتری کے لئے کئی مرتبہ احتجاج بھی ہوا لیکن کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہو سکا اور تھوڑی سی بارش پڑنے پر یہاں اس سڑک پر گاڑیوں کی تو دور انسانوں کو چلنا بھی دشوار بن جاتا ہے ۔ گریف کے آفیسر نے میٹنگ میں کہا کہ گراٹ موڑ سے کینٹھہ تک دو سو دیہاڑی دار جو اس محکمہ کے ساتھ منسلک ہیں کام کر رہے ہیں لیکن جب زمینی سطح پر دیکھا گیا تو پچاس فیصد ہی موجو دتھے باقی کہاں جاتے ہیں اس کا کوئی اتہ پتہ نہیں ہے ۔ آج کل بھی اس سڑک پر کچھوے کی چال تعمیری کام جاری ہے جس طرح سے ناقص میٹریل کا استعمال ہو رہا ہے اور کچھوے چال کی تعمیری کام ہو رہا ہے اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ پیچھے چھوڑ تو آگے دوڑ ہورہا ہے جب گول تک یہ سڑک مکمل ہو گی تب تک پیچھے سے بھی اس پر دوبارہ کام شروع کرنا پڑے گا کیونکہ میٹریل کافی ناقص لگ رہا ہے ۔ مقامی لوگوں اور سماجی کار کنوں نے کئی مرتبہ اس پر اپنی آواز بھی بلند کی اور آج پھر ایک مرتبہ لوگوں نے اس سڑک کی حالت کو بہتر بنانے اور گول بازار میں آبِ نکاس کے لئے اقدامات کا مطالبہ کیا تا کہ یہاں پر لوگوں کو پریشانیوں سے دوچار نہ ہونا پڑے۔