گول پریمیرلیگ کرکٹ ٹورنامنٹ شروع

 گول//کورونا کی رفتار ماند پڑنے کے ساتھ ہی خوشگوار موسم کے بیچ گول کے منزم کنڈ میں کرکٹ کھیلوں نے بھی رفتار پکڑ لی ہے ۔گزشتہ روز آرمی کی جانب سے فائنل میچ کے بعد آج گول پرائمرلیگ کرکٹ ٹورنا منٹ کا افتتاح گول کے نوجوان سیاسی لیڈر شہباز مرزا کے ہاتھوں ہوا۔اس موقعہ پرگول الیون اور سیکسر الیون کے درمیان پہلا میچ کھیلا گیا ۔ پہلا ٹاس گول الیون نے جیتا اور بلےبازی کرنے کا فیصلہ کیا۔کھیل کود کے ساز و سامان اور کھیل کے میدانوں کی طرف سرکار کی عدم دلچسپی پر تشویش کا اظہار کرتے پی ڈی پی لیڈر ضلع صدر رام بن شہباز مرزا نے کشمیر عظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہاکہ سرکار نوجوانوں کے لئے کوئی کام نہیں کر رہی ہے جبکہ کھیلوں سے متعلق اور کھیلوں کی طرف نوجوانوں کو راغب کرنے کے بڑے بڑے دعوے کئے جا رہے ہیں لیکن زمینی صورتحال اس کے بر عکس ہے ۔انہوں نے کہا کہ گول میں کھیل کے دو بڑے اسٹیڈیم جن میں ایک انڈور اسٹیڈیم ہے جبکہ دوسرا اوٹ ڈور اور دونوں ایک ہی جگہ پر ہیں لیکن ایک کا کام کافی عرصہ سے سست چل رہا ہے جبکہ اوٹ ڈور اسٹیڈیم کے بارے میں کوئی اتہ پتہ نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ سرکار نے صرف سپورٹس کونسل والوں کو بھیجا تھا اور انتظامیہ نے اوٹ ڈور اسٹیڈیم کی فائل بنائی ہے لیکن اس سے متعلق کوئی بات نہیں کر رہا ہے اور لوگوں کی زرعی اراضی کئی سالوں سے بےکار پڑی ہوئی ہے اورنا ہی ان غریب عوام کو کوئی معاوضہ دیا گیا ۔شہباز مرزا نے کہا کہ گول میں بہت سارے نوجوان جن میں کھیلوںکی صلاحیت کوٹ کوٹ کر بھر رکھی ہے لیکن یہ عدم توجہی کاشکار ہیں اگر یہاں کی طرف سرکار توجہ دیتی یہ نوجوان بیرون ریاست کی ٹیموں کے ساتھ کھیلنے کی بھی صلاحیت رکھتے ہیں ۔