گول میں پولیس کی بیوپارمنڈل کیساتھ میٹنگ | بازارمیں سی سی ٹی کیمرے نصب کرنے اور دیگر امور پر ہوئی بات

زاہد بشیر
گول//گول ڈاک بنگلہ میں پولیس اور بیو پار منڈل کی ایک اہم میٹنگ کا انعقاد ہوا جس میں تمام دکانداروں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا ۔ اس موقعہ پر ایس ڈی پی او گول اور ایس ایچ او گول موجودتھے ۔ میٹنگ میں پولیس نے دکانداروں سے کہا کہ گول بازار میں سی سی ٹی کیمرے نصب کرنے سے جہاں چوریوں کی وارداتوں میں کمی ہو گی وہیں مجرم کی شناخت اور اسے جلد از جلد پکڑے میں کافی مدد ملے گی ۔ انہوں نے کہا کہ گول بازار میں کم و بیش ایک درجن سے زائد سی سی ٹی کیمروں کی ضرورت ہے ۔ پولیس نے بیو پار منڈل صدرسے کہا کہ وہ دکانداروں سے رقم جمع کر کے سی سی ٹی کیمرے نصب کریں ۔ اس دوران دکانداروں نے اگر چہ سی سی ٹی کیمرے نصب کرنے کو خوش آئند قرار دیا لیکن وہیں انہوںنے پولیس و سول انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ان کیمروں کو نصب کرنے میںان کی مالی مدد کریں اور اس میں گول میں موجود آرمی سے بھی مدد لینی چاہئے کیونکہ آرمی اس طرح کے کاموں میں کافی مدد کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کوڈ کی وبا ء سے پہلے ہی دکاندارطبقہ نڈھال ہے وہیں دوسری جانب مہنگائی کی بھی مار ہے اس بیچ دکاندار مزید بوجھ اُٹھانے سے قاصر ہیں ۔اس موقعہ پر گول بازار میں گاڑیوں کی جامنگ کی وجہ سے راہگیروں کو آ رہی پریشانیاں ، سبزی میں بے تحاشہ اضافے کو اعتدال پر رکھنا اور مرغوں میں من مانی قیمتوں کو ایک قیمت پر فروخت کرنے بارے بھی بات چیت ہوئی ۔ اس موقعہ پر ایس ڈی پی او نے کہا کہ اگر کوئی بھی دکاندار بالخصوص مرغ فروش زیادہ قیمتوں پر فروخت کرنے کے جرم میں پکڑا گیا تو اس کے خلاف قانون کاروائی کی جائے گی اور ہر ایک دکاندار چاہئے وہ کریانہ ہو ، سبزی فروش ہو یا میٹ کی دکانیں تمام کو چاہئے کہ وہ دکانوں میں ریٹ لسٹ آویزان رکھیں تا کہ گاہک کو معلوم ہو کہ کون سی چیز کس قیمت پر فروخت ہو رہی ہے اور ہم تک شکایت نہیں پہنچے گی ۔