گول میں فوج کے زیر اہتمام طبی کیمپ

گول// گول میں آج 58آر آ رکی جانب سے ملٹی سپیلسٹ طبی کیمپ کا اہتمام ہوا ۔یہ کیمپ آپریشن سدبھاونا کے تحت آرمی میڈیکل کارپ ، یونیفارم فورس اور ضلع انتظامیہ رام بن کے اشتراک سے ہائر سکینڈری سکول گول میں کیمپ منعقد ہوا ۔کیمپ کا افتتاح ڈائریکٹر جنرل آرمی میڈکل کارپ لفٹنٹ جرنل ڈاکٹر منموئی گنگولی نے کیا جبکہ اس موقعہ پر ڈپٹی ایم جی نارتھ ہیڈ کوارٹر کمانڈنٹ میجر جرنل ڈاکٹر شارد بٹناگر ، جی او سی ، یونیفارم فورس، میجر جرنل دھیرج سیٹھی ،ضلع ترقیاتی کمشنر رام بن شوکت اعجاز بٹ ، ایس ایس پی رام بن انیتا شرما بھی اس کیمپ میں موجو دتھے ۔ اس دوروزہ کیمپ میں پہلے ہی روز دو ہزار سے زائد مریضوں کو دیکھا گیا ۔ کیمپ میں آئی سی یو، ایک آپریشن تھیٹر، مقام پر ایک کلینک لیبارٹری بھی قائم کیا گیا جس میں پورٹیبل جدید ترین سازوسامان اور مشینیں شامل ہیں جن میں ایکسرے اور الٹراساؤنڈ مشینیں بھی شامل تھیں ۔ اس موقعہ پر مریضوں کو جہاں ویل چیر ، لاٹھیاں ، بیساکھیاں ، چشمے وغیرہ تقسیم کئے وہیں دوسری جانب کافی تعداد میں مریضوں کو مفت ادویات بھی دی گئیں ۔اس کیمپ میں بیس ماہر ڈاکٹروں کی خدمات حاصل کی گئی تھی ۔ بعد سہ پہر ممبر پارلیمنٹ و مرکزی وزیر ڈولپمنٹ نارتھ ایسٹرن ریجن ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے اس کیمپ کا دورہ کیا اور آرمی کی جانب سے کاموں کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ گول میں پچاس لاکھ روپے اپنے ایم پی فنڈس سے تعمیری کاموں پر لگائے گئے ، انہوں نے کہا کہ چناب پر ایک پل کی تعمیر ، گول میں اسٹیڈیم شمسی لائٹیوں کی تنصیب وغیرہ منصوبوں پر بھی کام جاری ہے ۔ ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے جموں صوبہ میں بہت سارے ٹنلوں کی بات کرتے ہوئے کہا کہ بہت سارے ایسے ٹنل ہیں جن پر کام جاری ہے اور ان ٹنلوں کی تعمیر سے جہاں ایک طرف سے دوریاں کم ہوں گیں وہیں دوسری جانب ترقی میں بھی اضافہ ہو گا ۔ انہوں نے کہا کہ گول اور بدھن کے درمیان میں ٹنل اُن کے زیر غور ہے وہیں گول میں کیندریہ ویدیالیہ کا قیام بھی زیر غور ہے جبکہ ضلع رام بن کے لئے ایک کیندریہ ویدیالیہ کا قیام پہلے ہی عمل میں لایا گیا ہے ۔