گول۔ بھیمداسہ میں سڑک تنازعہ پر تصادم

 گول//گول کے بھیمداسہ علاقہ میں آج سڑک کے تنازعہ کو حل کرنے کے دوران لوگوںکو انتظامیہ و پولیس کے ساتھ تصادم ہوا جس دوران وہاں پر ایک پٹواری اور پولیس اہلکار کو چوٹیں آئیں ۔ تفصیلات کے مطابق گاگر بھیمداسہ سڑک کو الائمنٹ تبدیل کرنے کی غرض سے یہاں پر لوگوں نے پی ایم جی ایس وائی سڑک پر تعمیری کام بند کر دیا تھا اور آج اس سلسلے میں تحصیلدار گول محمد اشرف شیخ پٹواریوں اور پی ایم جی ایس وائی کے ملازمین جن میں اے ای ای اور جے ای موجود تھے اس جگہ پر تنازعہ کو حل کرنے کے لئے گئے تھے ۔یہاں پر تحصیلدار نے لوگوں کو بتایا کہ وہ ایک ریزولیشن دیں اور اس سلسلے میں وہ اعلیٰ حکام کو مطلع کریں گے ۔ اس موقعہ پر موجود لوگوں اور پٹواری کے درمیان کسی بات کو لے کر جھگڑا ہوا اور یہ طول پکڑتا گیا ۔ اس موقعہ پر لوگوں نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ پٹواری اور تحصیلدار نے انہیں گالیاں دیں  جس وجہ سے یہاں پر تصادم ہوا ۔ اس موقعہ پر پٹواری فاروق احمد اور ایک پولیس اہلکار کو چوٹیں آئیں ۔ تحصیلدار گول محمد اشرف شیخ نے کشمیر عظمیٰ کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ بھیمداسہ میں الائمنٹ کا اشو تھا ہم وہاں پر پی ایم جی ایس وائی کے ملازمین کے ساتھ ہمراہ گئے تھے اور وہاں پر ہم نے لوگوں سے کہا کہ وہ ایک ریزولیشن دے دیں اوپر کے لوگ تا کہ ہم سرکار کو بھیجیں گے کیونکہ جو بھی الائمنٹ تبدیل کرنی ہو گی وہ سرکار ہی کر سکتی ہے چاہئے اوپر کی ہو یا نیچے کی الائمنٹ ۔ انہوں نے کہا کہ ہم یہی بات کر رہے تھے کہ اچانک کچھ لوگوں نے ایک پٹواری پر حملہ کر دیا اس دوران بچائو کاروائی میں ایک پولیس اہلکار کو بھی چوٹیں آئیں ۔ تحصیلدار محمد اشرف نے مزید بتایا کہ گالی گلوچ کا کوئی مسئلہ نہیں ہے اب یہ لوگ اپنے آپ کو بچانے کے لئے یہ سب پروپگنڈا کر رہے ہیں ۔زخمی پٹواری اور اہلکار کو پولیس نے ایس ڈی ایچ گول لایا ۔ اس سلسلے میں کئی لوگوں کے خلاف پولیس نے کیس درج کیا اور آگے کی کاروائی شروع کر دی ۔