گورنمنٹ مڈل سکول درمن میں 150 بچوں کے محض 2 کمرے موجود

ڈوڈہ //ڈوڈہ کے تعلیمی زون بھٹیاس میں واقع گورنمنٹ مڈل اسکول درمن میں 150 سے زائد طلباء زیر تعلیم ہیں لیکن ان کے بیٹھنے کے لئے صرف دو کمرے موجود ہیں۔کشمیر عظمیٰ سے بات کرتے ہوئے مقامی لوگوں نے کہا کہ اعلیٰ حکام سرکاری اسکولوں کو میں بہتر و معیاری تعلیم فراہم کرنے کا دعویٰ کرتے ہیں لیکن بدقسمتی سے بیشتر سرکاری تعلیمی اداروں کی حالت خستہ حال ہیں۔انہوں نے کہا کہ محکمہ کی عدم توجہی و تعمیراتی ایجنسیوں کی لاپرواہی سے ڈوڈہ ضلع میں درجنوں عمارتوں میں غیر معیاری مواد استعمال کیا گیا ہے جس کی وجہ سے وہ معمولی بارشوں و ہواؤں سے ناقابل رہائش بن چکی ہیں۔وفد میں شامل بابر نفیس، محمد عباس و عبدالرزاق نے کہا کہ مڈل اسکول درمن میں ڈیڑھ سو بچوں کے لئے صرف دو کمرے دستیاب ہیں جبکہ زیر تعمیر عمارت پچھلے پانچ برسوں سے نامکمل ہیں۔مقامی لوگوں کے مطابق اسکول ہذا میں پینے کا پانی و بیت الخلاء و کھیل کا میدان کی عدم دستیابی سے بچوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔شاہ محمد و طارق حسین نے کہا کہ اس معاملے کو لے کر متعدد بار محکمہ کے اعلیٰ حکام سے رجوع کیا لیکن تاحال کوئی اقدامات نہیں کئے گئے۔انہوں نے ڈپٹی کمشنر ڈوڈہ و دیگر حکام سے اسکول عمارت کو مکمل کرنے و محکمہ کو جوابدہ بنانے کے لئے مؤثر اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔