گورنمنٹ مڈل اسکول گردن پائیں …بیٹھنے کیلئے 2کمرے ، بیت الخلاء تعمیر مگر پانی نہ دارد

 راجوری //گورنمنٹ مڈل اسکول گردن پائیں کی حالت ناگفتہ بہ بنی ہوئی ہے جہاں عمارتیں تو دو ہیں لیکن قابل استعمال صرف دو ہی کمرے ہیں۔ خستہ عمارت میں غریب گھرانوں کے بچے زیر تعلیم ہیں جن کی جانیں محفوظ نہیں ۔اگرچہ سکول کیلئے بیت الخلاء تعمیر کئے گئے ہیں تاہم ان میں پانی ہی دستیاب نہیں ۔اس سکول میں سات اساتذہ تعینات ہیںلیکن دن کے ایک بجے سبھی کو ڈیوٹی پر حاضر نہیں پایاگیا ۔ اس سکو ل کی خستہ حالی پر مقامی لوگ بھی تشویش مند ہیں اور ان کاکہناہے کہ ایک طرف ریاستی سرکار تعلیمی نظام کو بہتر بنانے کے بلند بانگ اعلانات کررہی ہے وہیں دوسری طرف سرکاری اسکولوں کی حالت تشویشناک ہے جس پر فوری توجہ کی ضرورت ہے ۔مقامی شخص محمد شفیع نے بتایا کہ اسکول کے لئے عمارت بنادی جاتی ہے لیکن اس میں غیر معیاری مواد استعمال کیاجاتا ہے جس کا نتیجہ چند سال بعد ہی سامنے آجاتا ہے اسلئے عمارت بناتے وقت خصوصی توجہ دی جانی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ اسکول انتظامیہ اور اساتذہ سے کسی قسم کی جواب دہی نہیں جس کی وجہ سے اکثر اساتذہ اپنے نجی کاموں میں مصروف رہتے ہیں اور غریب گھرانوں کے بچوں کوحالات کے رحم و کرم پر چھوڑ دیاگیاہے جو نہایت ہی افسوسناک ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نجی اسکولوں میں اس کے برعکس تعلیم اور بنیادی سہولیات دونوں میسر رہتی ہیں لیکن سرکاری اداروں کی طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ۔چیف ایجوکیشن آفیسر راجوری نے رابطہ کرنے پر بتایاکہ سکول کی عمارت کامعائنہ کیا جائے گااور اگر ضرورت پڑی تو اس کی مرمت کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ پانی کا معاملہ ڈپٹی کمشنر سے اٹھایا گیا ہے جس پر جلد ہی کام ہوگا ۔