گورنر کے مشیر کے شرمامرکزی وزیربجلی سے ملاقی

نئی دہلی//گورنر کے مشیر کے کے شرما نے یہاں بجلی اور نئی و قابلِ تجدید توانائی کے مرکزی وزیر آر کے سنگھ کے ساتھ ملاقات کی اور جموں کشمیر کی حکومت کو بجلی کی واجبات ادا کرنے میں درپیش مشکلات کو حل کرنے کیلئے  پاور بانڈس وجود میں لانے سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا ۔ میٹنگ میں گورنر کے مشیر نے مرکزی وزیر سے درخواست کی کہ وہ ریاستی حکومت کو پاور بانڈس وجود میں لانے کی اجازت دیں تا کہ بجلی کی ادائیگی سے متعلق واجبات کو کلیئر کیا جا سکے جو 8 ہزار کروڑ روپے تک پہنچ چکے ہیں ۔ اس موقعہ پر پاور بانڈس کے ذریعے 3500 کروڑ روپے وصول کرنے سے متعلق مرکزی حکومت کی اجازت سے متعلق معاملات کو بھی زیر بحث لایا گیا ۔ یہ درخواست ریاستی حکومت کی طرف سے ادھے سکیم کے تحت پہلے ہی پاور بانڈس کے ذریعے حاصل کی گئی 3500 کروڑ روپے کے علاوہ ہے ۔مشیر موصوف نے اس موقعہ پر کہا کہ اس قدم سے ریاستی حکومت بجلی کی خرید سے متعلق تمام واجبات کو کلیئر کرنے میں کامیاب ہو جائے گی ۔ مشیر نے کہا کہ ریاستی انتظامی کونسل کی طرف سے بجلی اصلاحات کو یقینی بنانے سے متعلق کئی اقدامات کئے ہیں اور حال ہی میں گورنر کی سدارت میں منعقد ایس اے سی کی میٹنگ کے دوران جے کے ایس پی ڈی سی کی مالی تشکیل نو کو بھی منظوری دی گئی تا کہ بجلی شعبے میں قرضے کا انتظام کیا جائے اور جے کے ایس پی ڈی سی کے بیلنس شیٹ میں بہتری لائی جا سکے ۔ بجلی محکمے نے حال ہی میں جے کے سٹیٹ پاور ٹریڈنگ کارپوریشن کا قیام بھی عمل میں لایا جو بجلی کی خرید سے متعلق بلوں کی ادائیگی لیٹر آف کریڈٹ کے ذریعے سے کیا کرے گی ۔ اس عمل میں جموں کشمیر بنک کا تعاون حاصل ہو گا اور اس سے ریاست میں بجلی سستی ہو جائے گی ۔ ایل سی کو عملانے سے متعلق مفاہمت نامہ حتمی مرحلے میں ہے ۔ مرکزی وزیر نے بجلی صورتحال میں بہتری لانے کے ریاستی اقدامات کی سراہنا کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی سرکار ریاستی حکومت کے منصوبوں کو منظوری دینے کیلئے ہر ممکن مدد فراہم کرے گی ۔ بجلی کے مرکزی سیکرٹری اے کے بھلہ اور کمشنر سیکرٹری پی ڈی ڈی جموں کشمیر ہردیش کمار سنگھ بھی اس موقعہ پر موجود تھے ۔