گورنر کے شکایتی سیل میں عوامی دربار

سری نگر//گورنر کے مشیر بی بی ویاس نے لوگوں کے مسائل سننے اور انہیں حل کرانے کے حوالے سے کل یہاں گورنرس گریوینس سیل کے تحت ایک عوامی دربار کا انعقاد کیا۔اس دوران 27 وفوداور 41 افراد نے مشیر موصوف کے ساتھ ملاقات کی اور انہیں اپنے اپنے مسائل سے آگاہ کیا۔ مشیر نے ان مسائل کو معیاد بند مدت کے اندر حل کرانے کی یقینی دہانی کرائی۔وفود کے ساتھ بات کرتے ہوئے مشیر نے کہا کہ لازمی ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ لوگوں کو کسی بھی طرح کی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے اور ان کے مسائل کو کم سے کم مدت میں حل کیا جانا چاہیئے۔مشیر نے مطالبات غور سے سنے اور یقین دلایا کہ جائز مطالبات کو جلد ازجلد پورا کیا جائے گا۔ٹیکسی ڈرائیورس ایسوسی ایشن کے وفد نے قرضوں پر سود کی شرح میں کمی لانے کا مطالبہ کیا۔ مائیگرنٹوں کے وفد نے وقت پر ریلیف کی باز آباد کاری کے معاملے کو اُجاگر کیا ۔جن لوگوں نے سرکاری سکیموں کے لئے اپنی اراضی عطیہ کے طور پر دی ہے انہوں نے نوکریوں کو باقاعدہ بنانے کا مطالبہ کیا۔کرافٹ ڈیولپمنٹ انسٹی چیوٹ کے طلاب نے بھی مشیر کے ساتھ ملاقات کی اور اپنے اپنے مسائل ان کے سامنے رکھے۔غلام محمد سالورہ کی قیادت میں گاندربل کے ایک  وفد نے علاقے میں بجلی اور سڑکوں کے ڈھانچوں کو بہتر بنانے کا مطالبہ کیا۔زِرپورہ بجبہاڑہ کے وفد نے بنیادی سہولیت میں بہتری لانے کی وکالت کی۔جن دیگر وفود نے بی بی وِیاس کے ساتھ ملاقات کی اور اپنے مسائل کو اجاگر کیا ان میں دیہی ترقی محکمہ کے ڈیلی ویجر ورکر،آل جے اینڈ کے ولیج لیول ورکرس ایسو سی ایشن ، ڈیٹا انٹری آپریٹروں کا وفد ، بٹہ ونی گاندربل کاوفد ، کشمیر یوتھ انٹرپرینورس اور کئی دیگر وفود شامل ہیں۔