گنہ ون کنگن میں طبی سہولیات کا فقدان

کنگن//کنگن کے گنہ ون نامی علاقے میں طبی سہولیات کے فقدان کی وجہ سے لوگوں کو کئی مشکلات کا سامنا ہے۔علاقے میں موجود یہ پرائمری ہیلتھ سنٹر صبح دس بجے سے شام چار بجے تک کھلا رہتا ہے جس کے بعد ایک وسیع آبادی کو رات کے دوران علاج ومعالجہ کے لئے دوسرے ہسپتالوں کا رخ کرنا پڑتا ہے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ اگرچہ سرکار نے گنی ون علاقے میں کروڑوں روپے کی لاگت سے پرائمری ہیلتھ سنٹر قائم کیا تاکہ لوگوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ چار بجے کے بعد ہسپتال کو بند کیا جاتاہے اور رات کے دوران ایک ایمبولینس ڈرائیور اور ایک چوکیدار موجود ہوتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ چار بجے کے بعد اگر کوئی بیمار ہوجاتا ہے تو اسے کنگن یا گنڈ ہسپتال لے جانا پڑتا ہے جوکہ ایک پریشان کن مسئلہ ہے ۔ مقامی لوگوں نے گورنر انتظامیہ اور ضلع ترقیاتی کمشنر گاندربل سے مطالبہ کیا کہ پرائمری ہیلتھ سنٹر گنی ون میں رات کے دوران بھی ڈاکٹروں کو تعینات کیاجائے تاکہ اس وسیع آبادی والے علاقے میں لوگوں کوپریشانیوں کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ مقامی لوگوں نے ہائر سیکنڈری سے ہسپتال روڈ تک سڑک پر میکڈم بچھانے کا بھی مطالبہ کیا تاکہ مریضوں کو ہسپتال تک پہنچنے میں آسانی ہو۔