گندنہ زون کے سرکاری سکولوں میں بنیادی ڈھانچے کافقدان

ڈوڈہ//ضلع رورل یوتھ ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر فریداحمدنائیک نے زون گندنہ کے دیہی علاقوں کے سرکاری سکولوں میں ڈھانچے کے فقدان اورسکولوں کی خستہ حالی پرتشویش کااظہارکیاہے۔یہاں جاری پریس بیان میں فریداحمد نائیک نے کہاکہ دیہی علاقوں کے 70 فیصدطلباء بہترتعلیم کیلئے پرائیویٹ سکولوں میں جاتے ہیں جبکہ جومجبوریوں کے سبب پرائیویٹ سکولوں میں نہیں جاسکتے ہیں وہ سرکاری سکولوں میں پڑھ رہے ہیں لیکن افسوس کامقام ہے کہ سرکاری سکولوں میں زیرتعلیم طلباکوبھی معیاری تعلیم نہیں دی جارہی ہے۔انہوں نے کہاکہ گندنہ زون کے سرکاری سکولوں میں بنیادی ڈھانچے کافقدان ہے۔انہوں نے کہاکہ زون کے لگ بھگ 60-70 فیصد سرکاری سکولوں میں بنیادی ڈھانچہ مثلاً کھیل کامیدان، پانی کی سہولت، بیت الخلاء وغیرہ بالکل بھی نہیں ہے۔نائیک نے کہاکہ گورنمنٹ مڈل سکول ہالہ دھارااے سکولوں کی خستہ حالی کی نمایاں مثال ہے ۔ہالہ وارڈنمبر3 کے مقامی لوگوں اورپنچ کے مطابق سکول میں طلبابنیادی سہولیات سے محروم ہیں ۔انہوں نے کہاکہ سکول میں بنے بیت الخلاء نہایت خستہ حالی کاشکارہیں۔انہوں نے کہاکہ سکولوں میں سہولیات اورڈھانچے کے فقدان کے سبب طلباء متاثرہورہے ہیں اورانہیں شدیدمشکلات جھیلناپڑرہی ہے۔ضلع رورل یوتھ ویلفیئر ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے محکمہ تعلیم اورضلع ترقیاتی کمشنرڈوڈہ سے مانگ کی ہے کہ وہ گندنہ زون کے سرکاری سکولوں میں ڈھانچے کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے مداخلت کریں تاکہ طلباء کامستقبل تاریک ہونے سے بچ سکے۔