گلہ دھار میں عظمت اولیاء کانفرنس کا انعقاد

 رام بن/ / ضلع ڈوڈہ اور رام بن کی درمیانی بلند و بالا پہاڑی گلہ دھار کے مقام بیٹھک گاہ حضرت شاہ فرید الدین بغدادیؒ پر عظمت اولیاء کرام کے عنوان سے یک روزہ عظیم الشان کانفرنس کا انعقاد ہوا۔ جس کا اہتمام انتظامیہ کمیٹی بیٹھک گاہ کی طرف سے کیاگیا ۔ کانفرنس کے مہمان خصوصی مولانا نذیر احمد رام بن تھے، جبکہ صدارت کے فرائض حافظ محمد رمضان ڈوڈہ نے انجام دیئے۔ اس موقع پر مولانا نذیر احمد نے حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ غار حراء سے چمکنے والی نور نبوت کی شعاؤں کا عکس سرزمین کشمیر اور اس کوہستانی خطۂ چناب پر اولیاء کرام کے ذریعہ پڑا۔ ان ہی مقدس ہستیوں میں سے حضرت شاہ فرید الدین بغدادیؒ بھی ہیں جو پیغمبر کے مشن کی آبیاری اور فکر امت کے نتیجے میں خواب میں دیدار مصطفی سے مشرف ہونے کے بعد غیبی اشارہ پاتے ہی تعمیل حکم میں ان مشکل ترین اور دشوار گزار پہاڑی راستوں سے گزر کر اللہ کی توحید و وحدانیت کا پیغام لے کر وارد کشتواڑ ہوئے۔ گلہ دھار کے اس مقام پر حضرت شاہ صاحب بیٹھے تھے اس لئے اس جگہ کو ان کی طرف منسوب کرتے ہوئے بیٹھک گاہ فریدیہ کے نام سے جانا جاتا ہے۔ اس پہاڑی علاقے پر حضرت شاہ فرید الدین بغدادیؒ کا احسان عظیم ہے کہ انہوں نے آج سے کم و بیش چار سو سال قبل توجہ فرماکر اپنے اعمال و افعال اور اخلاق و کردار کے ذریعہ لوگوں کے دلوں کو جیت کر اس علاقے کو فتح کیا۔ آج بھی اس علاقے کے ہندو مسلم حضرت شاہ صاحب کوبڑی عقیدت سے یاد کرتے ہیں۔حضرت شاہ صاحب سے ہماری مذہبی عقیدت اور دینی نسبت ہے۔ اللہ کے فضل و کرم اور شاہ صاحب کے توسل سے ہم تک حق و صداقت کا پیغام پہنچا اور ہم نے اپنے حقیقی خالق و مالک کو پہچانا اگر ان کے مبارک قدم اس سرزمین پر نہ پڑے ہوتے تو ہمیں مساجد کی حاضری ،علماء کی زیارت ، مدارس و مکاتب سے آج قال اللہ و قال الرسول کی صدائیں سننے کو ہرگز نہ ملتیں بلکہ ہم ایمان جیسی عظیم دولت سے بھی محروم رہ جاتے۔ لہٰذا شاہ صاحب سے محبت و عقیدت کا تقاضا ہے کہ ہم ان کے مشن کو عام کرنے میں اپنے جذبات کو اعتدال میں رکھ کر صبر و تحمل اور سنجیدگی و متانت سے کام لیتے ہوئے مسلکی، گروہی، لسانی اور علاقائی بنیاد سے اوپر اٹھ کر دینی و سیاسی پلیٹ فارم پر اتحاد کا مظاہر ہ کریں۔ اس موقع پر مولانا نے ضلع انتظامیہ ڈوڈہ کو بھی متنبہ کیا کہ وہ عوام الناس سے دوہرا معیار اپنانے کے بجائے مساوات کا برتاؤ کرے تاکہ کوئی بھی طبقہ احساس کمتری کا شکار نہ ہو اور علاقے کا امن و امان و آپسی بھائی چارہ برقرار رہ سکے۔نیز انہوں نے ڈپٹی کمشنرڈوڈہ و ایس ایس پی ڈوڈہ سے مطالبہ کیا کہ وہ علاقۂ سراج کی عوام اور انتظامیہ کمیٹی بیٹھک گاہ فریدیہ کی جائز مانگوں کو ترجیحی بنیادوں پر پورا کرنے کے ساتھ ساتھ ان کے مسائل کو حل کرنے میں اپنا کردار ادا کریں۔ کانفرنس میں ضلع رام بن و ڈوڈہ کے مختلف دور دراز علاقوں سے علماء کرام و ائمہ مساجد کی کثیر تعداد کے علاوہ ہزاروں عاشقان اولیاء نے شرکت کی۔پروگرام کا اختتام مولانا جاوید احمد قاسمی بٹھنڈی جموں کی دعا اور قاری جاوید احمد کے کلمات تشکر پر ہوا۔