گلمرگ میں تازہ برف باری| 6 سے8 مارچ تک برف و باراں کا امکان

سری نگر//وادی کشمیر میں ہلکے درجے کے برف و باراں کے بیچ محکمہ موسمیات نے برف و باراں کے ایک اور مر حلے کی پیش گوئی کر دی ہے۔
 
متعلقہ محکمے کے ایک ترجمان کی پیش گوئی کے مطابق وادی کشمیر میں اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران موسمی صورتحال جوں کی توں رہنے کا امکان ہے۔
 
انہوں نے کہا کہ تاہم وادی میں چار اور پانچ مارچ کو موسم خشک رہنے کا امکان ہے۔
 
ان کا کہنا تھا کہ اس کے بعد میں 6 سے 8 مارچ تک برف و باراں متوقع ہے۔
 
ادھر وادی میں مطلع ابر آلود رہنے سے شبانہ درجہ حرارت میں بہتری واقع ہوئی ہے۔
 
گرمائی دارلحکومت سری نگر میں کم سے کم درجہ حرارت4.6 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جہاں گذشتہ شب کم سے کم درجہ حرارت 4.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
وادی کے شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ جہاں دوران شب 7 سینٹی میٹر تازہ برف جمع ہوئی ہے، میں کم سے کم درجہ حررات منفی4.4 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جو گذشتہ شب منفی 5.4 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
وادی کے دوسرے مشہور سیاحتی مقام پہلگام میں کم سے کم درجہ حرارت 0.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جہاں گذشتہ شب کا کم سے کم درجہ حرارت منفی 0.8 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
سرحدی ضلع کپوارہ میں کم سے کم درجہ حرارت4.6 ڈگری سینٹی گرٰڈ ریکارڈ کیا گیا جہاں گذشتہ شب کا کم سے کم درجہ حرارت 3.5 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
گیٹ وے آف کشمیر کے نام سے مشہور قصبہ قاضی گنڈ میں کم سے کم درجہ حرارت 0.9 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جہاں گذشتہ شب کا کم سے کم درجہ حرارت 2.0 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ ہوا تھا۔
 
لداخ یونین ٹریٹری کے ضلع لیہہ میں کم سے کم درجہ حرارت منفی4.6 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا جبکہ ضلع کرگل میں منفی9.0 ڈگری سینٹی گریڈ اور قصبہ دراس جو سائبیریا کے بعد دنیا کی دوسری سردترین جگہ ہے، میں کم سے کم درجہ حرارت منفی11.7 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔
 
دریں اثنا وادی میں جمعرات کی صبح ہلکی بارشیں ہوئی جس کے بعد گہرے بادلوں اور آفتاب کے درمیان دن بھر سنگھرش جاری رہا۔
 
وادی میں سردی سے بچنے کے لئے ابھی بھی دفتروں، دکانوں، کارخانوں اور دیگر کام کی جگہوں پر گرمی کے آلات جیسے ہیٹروں وغیرہ کا استعمال کیا جا رہا ہے۔