گزریال ،دردسنہائی ٹینشن ترسیلی لائین لوگوں کیلئے دردسر بار بار جل کرگر جانے سے کئی علاقوں کی بجلی سپلائی متاثر

اشرف چراغ

کپوارہ//دردسن،وارسن اورریشی گنڈ کپوارہ میں برسوں پرانی بجلی کی جلی کٹی ہائی ٹینشن ترسیلی لائین لوگوں کیلئے دردسربنی ہوئی ہے ،کیوں یہ ترسیلی لائن ڈگری کالج کرالہ پورہ بمقام دردسن بار بار جل کر گر جاتی ہے جس کی وجہ سے مذکورہ علاقہ دوران شب بجلی سپلائی سے محروم ہو جاتا ہے ۔ان علاقوں کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ 40سال قبل اس علاقہ کو بجلی سپلائی سے جو ڑ دیا گیا لیکن تب سے آج تک کبھی بھی بجلی کی ایچ ٹی لائین کو نہیں بدلا گیا جس کے نتیجے میں یہ ترسیلی لائن دو سال سے باربارجل کر گر جاتی ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ آج تک محکمہ کے اہلکارو ں نے اسی لائین کو چیر پھا ڑ کر کے جو ڑ دیاتاہم موسم سرما شروع ہوتے ہیں کرالہ پورہ سے وارسن تک بجلی سپلائی کرنے والی یہ ہائی ٹینشن ترسیلی لائن بار بار جل کر گر جاتی ہے جس کی وجہ سے پورا علاقہ اندھیرے میں ڈوب جاتا ہے ۔صارفین نے الزام لگایا کہ ایک ہفتہ کے دوارن یہی صورتحال بنی ہوئی ہے اور یہ بوسیدہ ایچ ٹی لائین جل کر گر جاتی ہے تاہم محکمہ کے اہلکار اس کو دو بارہ جو ڑ دیتے ہیں لیکن اب وہ بھی گزشتہ ایک ہفتہ سے بے بس نظر آتے ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ اگر چہ انہو ں نے معاملہ اسسٹنٹ ایگز کیٹو انجینئر ترہگام سب ڈویژن کی نو ٹس میں لایا ، انہو ں نے کہا کہ اب سارے فنڈس مقامی پنچائتو ں کے ذریعے واگزار کئے جاتے ہیں ۔انہو ں نے کہا کہ اگر مقامی پنچائتیں انہیں بجلی کی ہائی ٹینشن ترسیلی لائن کو بدلنے کے لئے فنڈس واگزار کریں گی تو محکمہ کسی دیر کے بغیر اس بوسیدہ ترسیلی لائن کو بدل دے گا اور صارفین کو شیڈول کے مطابق بغیر خلل بجلی سپلائی فراہم کی جائے گی ۔مقامی لوگو ں نے علاقہ کے 8پنچائتو ں پر مشتمل سرپنچوں اور بی ڈی سی کرالہ پورہ سے مطالبہ کیا کہ وہ آئندہ بجٹ میں کرالہ پورہ سے دردسن ،ریشی گنڈ ،گزریال اور وارسن کو بجلی سپلائی کرنے والی ہائی ٹینشن لائن کے لئے فنڈ مختص رکھے تاکہ لوگو ں کو بجلی بحران سے نجات مل سکے ۔