گریز میں فورسز کی مشترکہ کارروائی

سرینگر//گریز میں فورسز اور پولیس نے ایک مشترکہ کارروائی کے دوران ایک نالے سے بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولی بارود ضبط کیا ہے ۔پولیس نے اس حوالے سے ایک کیس درج کر کے مزید کارروائی شروع کی ہے ۔کے این ایس  کے مطابق بانڈی پورہ ضلع کے گریز  علاقہ میں سیکورٹی فورسز نے گریز میں لائن آف کنٹرول کے نزدیک ایک تلاشی آپریشن کے دوران ایک نالے سے اسلحہ و گولہ بارود بر آمد کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ گریز کے تاربل گاؤں میں ایل او سی کے قریب گوند نالے سے فوج اور پولیس نے بدھ کی صبح ایک تلاشی آپریشن کے دوران اسلحہ و گولہ بارود بر آمد کیا۔انہوں نے کہا کہ بر آمد شدہ اسلحہ وگولہ بارود میں 3 اے کے 47 رائفلیں، ان کے 12 میگزین، 2پستول، 4 پستول میگزین، 350گولیاں، 200پستول گولیاں، 18 گرینیڈ اور کچھ قابل اعتراض مواد بھی شامل ہے۔خیال رہے جموں و کشمیر پولیس کے سربراہ دلباغ سنگھ نے بتایا کہ گزشتہ کئی ہفتوں سے پاکستان کی جانب سے دراندازی کرنے کا سلسلہ دوبارہ شروع کیا گیا ہے ۔ انہوں نے  راجوری میں منگل کے روز ایک پریس کانفرنس میں بتایا تھا کہ کئی گروپ در اندزی کر چکے ہیں جن میں بیشتر کو مارا گیا ہے ۔
 
 

منیال گلی تھنہ منڈی  سے ہینڈ گرینڈبرآمد

تھنہ منڈی/عظمیٰ یاسمین /سب ڈویژن تھنہ منڈی کے منیال گلی علاقے سے ایک کارآمد بم برآمد کیا گیا۔ذرائع نے بتایا کہ مقامی لوگوں کو راستے پر ہینڈ گرینڈملا جس کی پولیس انتظامیہ کو اطلاع دی گئی ۔اطلاع ملتے ہی تھنہ منڈی پولیس حرکت میں آئی اورایس ایچ او تھنہ منڈی انسپکٹر فرید احمد چوہدری پولیس نفری اور دیگر اہلکاروںکے ہمراہ موقعہ پر پہنچ گئے اور حفاظتی اقدامات اٹھاتے ہوئے علاقہ کا محاصر ہ کرلیا گیا ۔اس کے بعد فوج کے خصوصی دستے کی مدد سے مذکورہ بم کو ناکارہ بنایا گیا ۔