گجرات میںغیرموسمی بارشوں کاقہر | آسمانی بجلیاں گرنے سے24ہلاک،23زخمی

عظمیٰ نیوزڈیسک

سرینگر//گجرات میں غیر موسمی بارشوں کے دوران آسمانی بجلی گرنے سے 24 افراد ہلاک اور23دیگرزخمی ہوگئے ۔ ایک سرکاری افسرنے پیرکو احمدآبادمیں بتایاکہ ریاست گجرات میں بڑے پیمانے پر غیر موسمی بارش کے دوران مختلف حصوں میں آسمانی بجلی گرنے سے20 افراد ہلاک ہو گئے۔ریاستی ایمرجنسی آپریشن سینٹر کے ایک اہلکار کے مطابق، گجرات کے مختلف حصوں سے اب تک بارش سے متعلق اتوارکو24 اموات کی اطلاع ملی ہے جبکہ دیگر23افرادزخمی ہوگئے۔انہوںنے کہاکہ تمام ہلاکتیں غیر موسمی بارش کے دوران آسمانی بجلی گرنے کی وجہ سے ہوئیں جس نے اتوار کو ریاست کو تباہ کر دیا۔ریاستی ایمرجنسی آپریشن سینٹر کے اہلکار نے بتایا کہ داہود ضلع میں 4، بھروچ میں3، تاپی میں2، اور احمد آباد، امریلی، بناسکانٹھا، بوٹاڈ، کھیڑا، مہسانہ، پنچ محل، سابر کانٹھا، سورت، سریندر نگر اور دیو بھومی دوارکا میں ایک ایک شخص کی موت ہوئی۔ہندوستان کے محکمہ موسمیات (آئی ایم ڈی) نے کہا ہے کہ پیر کو بارش کم ہونے کی امید ہے۔SCEO کے اعداد و شمار کے مطابق، اتوار کو گجرات کے252 میں سے234 تعلقہ میں بارش ہوئی۔ سورت، سریندر نگر، کھیڑا، تاپی، بھروچ اور امریلی اضلاع میں16 گھنٹوں میں 50سے117 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی، جس سے معمولات زندگی درہم برہم ہو گئے اور فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔عہدیداروں نے بتایا کہ فصلوں کو نقصان پہنچانے کے علاوہ بارش نے سوراشٹرا کے موربی ضلع کی سیرامک انڈسٹری کو بھی متاثر کیا کیونکہ فیکٹریاں بند رہنے پر مجبور ہوگئیں۔ آئی ایم ڈی کے احمد آباد سنٹر کی ڈائریکٹر منورما موہنتی نے کہا کہ بارش پیر کو کم ہو جائے گی اور جنوبی گجرات اور سوراشٹرا اضلاع کے کچھ حصوں میں مرکوز رہے گی۔ آئی ایم ڈی نے اپنے بلیٹن میں کہا کہ یہ بارش شمال مشرقی بحیرہ عرب اور اس سے ملحقہ سوراشٹرا اور کچ کے علاقوں میں ایک طوفانی گردش کی وجہ سے ہو رہی ہے۔مرکزی وزیر امیت شاہ نے اتوار کی رات ایکس پر ایک پوسٹ میں کہاکہ گجرات کے مختلف شہروں میں خراب موسم اور آسمانی بجلی گرنے سے کئی لوگوں کی موت کی خبر سے مجھے بہت دکھ ہوا ہے۔ جنہوں نے اس سانحے میں اپنے پیاروں کو کھو دیا۔مقامی انتظامیہ امدادی کاموں میں مصروف ہے، زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعاگو ہے۔