گاہنی میں ایک ماہ سے بجلی نہ دارد

مینڈھر//سرحدی تحصیل منکوٹ کی پنچایت گاہنی میں بجلی کی سپلائی نہ ہونے سے لوگ پریشان ہیں۔ وارڈ نمبر ایک اور دو میں کئی دنوں سے بجلی غائب ہے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ گزشتہ ایک مہینے سے ان کے علاقے کو بجلی فراہم کرنے والاا ٹرانسفامر خراب پڑا ہے جسے ٹھیک کرنے کی زحمت گوارہ نہیں کی جارہی ۔انہوں نے بتایاکہ ٹرانسفارمر یہاں سے لیاتوگیاہے تاہم اسے واپس نہیں لایاگیااور وہ اندھیرے میں اپنی زندگی بسر کر رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ اس سلسلہ میں انہوں نے کئی بار محکمہ کے اعلیٰ آفیسران کے دفاتر کے چکر کاٹے لیکن کسی نے سنوائی نہیں کی اور اس دور میں بجلی کے بغیر سے کس قدر مشکلات کاسامناکرناپڑتا ہے ،یہ بیان سے باہر ہے ۔انہوں نے محکمہ کے ملازمین پر لاپرواہی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ وہ اپنی ڈیوٹی پر کوئی توجہ نہیں دے رہے ۔انہوں نے کہاکہ فوری طور ٹرانسفارمر نصب کرکے بجلی سپلائی بحال کی جائے نہیں تو وہ احتجاج کی راہ اختیار کریں گے ۔ مقامی لوگوں کاکہناہے کہ اس سرحدی علاقے میں کوئی متبادل بھی نہیں اور بجلی کا نہ ہونا بچوں کی تعلیم پر بھی اثر انداز ہورہاہے جنہیں پہلے کئی ماہ تک ہندوپاک کشیدگی کی وجہ سے تعلیم حاصل کرنے کا موقعہ نہیں ملا اور اب محکمہ بجلی نے رہی سہی کسر پوری کردی ہے ۔ اس حوالے سے محکمہ بجلی کے ایک افسر نے بتایاکہ دو دن کے اندر اندر ٹرانسفارمر کا بندوبست کردیاجائے گا اور بجلی سپلائی بحال ہوجائے گی۔