گاڑیوں کے آٹومیٹڈ فٹنس ٹیسٹ لازمی قرار

سرینگر//گاڑیوں کیلئے فٹنس سرٹیفکیٹ کو لازمی قرار دیا جا سکتا ہے۔ مرکزی وزارت روڈ ٹرانسپورٹ اور ہائی ویز کی طرف سے جاری کردہ تازہ ترین مسودہ نوٹیفکیشن کے مطابق، جلد ہی گاڑیوں کے لیے فٹنس سرٹیفکیٹ کو لازمی قرار دیا جائیگا۔ اس فٹنس سرٹیفیکیشن کے لیے ضروری ہے کہ گاڑیوں کو خودکار مشین سے ٹیسٹ کیا جائے۔مسودے کے مطابق، ہلکی موٹر گاڑیوں اور بھاری مال بردار گاڑیوں کی جانچ کے لیے الگ الگ ٹائم لائنز ہیں۔ بھاری گاڑیوں کے لیے خودکار مشینوں کے ذریعے لازمی جانچ یکم اپریل 2023 سے شروع ہوگی۔LMV اور درمیانہ مال بردار گاڑیوں کے لیے اس طرح کی جانچ یکم جون 2024 سے شروع کرنے‘ کی تجویز ہے۔ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے’’تسلیم، ضابطہ، اور کنٹرول قاعدہ 175 کے مطابق رجسٹرڈ خودکار ٹیسٹنگ اسٹیشن کے ذریعے، فٹنس لازمی طور پر کی جائے گی۔ ‘‘نوٹیفکیشن کے مسودے میں آٹھ سال سے کم عمر کی گاڑیوں کے لیے دو سال کا وقفہ اور فٹنس سرٹیفکیٹ کی تجدید میں آٹھ سال سے زیادہ پرانی گاڑیوں کے لیے ایک سال کی تاخیر کی سفارش کی گئی ہے۔ متعلقہ وزارت فٹنس سرٹیفیکیشن کے سلسلے میں مسودے کی اشاعت کے تیس دنوں کے اندر مسودہ نوٹیفکیشن کے ذریعے عوام کے تبصرے اور آراء طلب کر رہی ہے۔ مسودہ میں کہا گیا ہے ’’ مدت کے ختم ہونے سے پہلے مسودہ قوانین کے سلسلے میں کسی بھی شخص سے جو اعتراضات یا مشورے موصول ہوسکتے ہیں ان پر مرکزی حکومت غور کرے گی۔‘‘