گاندھی نگر جموںمیں تیندوا نمودار، پکڑے جانے سے قبل3کو زخمی کردیا

 جموں//منگل کے روز ایک تیندوے کے بچے نے شہر کے ایک پْوش علاقے میں گھس کر دو گھنٹے سے زیادہ عرصہ تک جاری رہنے والے کارروائی میں گرفتاری سے قبل محکمہ وائلڈ لائف کے دو اہلکاروں سمیت تین افراد پر حملہ کرکے انہیں زخمی کردیا۔تیندوے کے حملے میں دو وائلڈ لائف اہلکار  بشمول ایک ڈاکٹر اور ایک شہری زخمی ہو گئے جبکہ اس کی موجودگی سے شہر کے گاندھی نگر گرین بیلٹ میں لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔عہدیداروں نے بتایا کہ تیندوے نے حیرت انگیز تماشائیوں کا ہجوم اپنی طرف راغب کیا ، انہوں نے حکام کی بار بار اپیلوں کے باوجود اپنی حفاظت کے لئے منتشر ہونے کے بجائے اپنے موبائل فون کا استعمال کرتے ہوئے آپریشن کو ریکارڈ کیا۔جموں کے وائلڈ لائف وارڈن انیل کمار اتری نے بتایا "ہمیں صبح ساڑھے گیارہ بجے کے قریب گاندھی نگر کے گرین بیلٹ کے علاقے میں تیندوے کی موجودگی کے بارے میں ایک فون موصول ہوا اور ہم نے ٹرینکویلائزر گنوں اور پنجریوں کے ساتھ امدادی ٹیمیں وہاںپہنچائیں۔" انہوں نے بتایا کہ ٹیمیں تیندوے کو پرسکون کرنے میں کامیاب ہوگئیں اور رات 2 بجے کے لگ بھگ اسے منڈا چڑیا گھر منتقل کردیا گیا۔ اس عمل میں ایک وائلڈ لائف ڈاکٹر اور ایک مددگار تیندوے کے ذریعہ زخمی ہوگئے تھے اور انہیں اسپتال داخل کرایا گیا تھا۔ایک پولیس اہلکار نے بتایا کہ ایک شہری ، جس پر جانوروں کا حملہ کرنے والا پہلا شخص تھا ، اس کے چہرے اور سر پر شدید چوٹیں آئیں ، انہوں نے مزید بتایا کہ اسے گورنمنٹ میڈیکل کالج (جی ایم سی) اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔عہدیدار نے بتایا کہ تیندوے کو پارک کے اندر ایک باغبان نے دیکھا اور محکمہ وائلڈ لائف کو فوری طور پر اطلاع دی گئی۔ حکام نے بتایا کہ تیندوے گذشتہ ہفتے قریبی جنگل سے شہر میں داخل ہوا تھا اور اسے جموں شہر کے باہو فورٹ علاقے میں دیکھا گیا تھا جس کے بعد اہل علاقہ اور ملحقہ علاقوں کے لوگوں کو محتاط رہنے کو کہا گیا تھا۔